بہاولپور ،محکمہ انہار میں 2ارب روپے کے کرپشن سکینڈل کی تحقیقات مکمل ،افسران طلبی کے باوجود غیر حاضر

  بہاولپور ،محکمہ انہار میں 2ارب روپے کے کرپشن سکینڈل کی تحقیقات مکمل ...

  

احمد پور شرقیہ ( تحصیل رپورٹر)ایریگیشن ڈویژن احمد پور شرقیہ میں دو ارب روپے کا کرپشن سکینڈل اینٹی کرپشن بہاولپور نے تحقیقات مکمل کر لی ایڈیشنل ڈائریکٹر انٹی کرپشن بہاولپور نے محکمہ انہار کے آفیسران کو ریکارڈ سمیت طلب کر لیا مگر آفیسران ایریگیشن حاضر نہ ہووئے تفصیلات ممبر مرکزی کونسل پاکستان مسلم لیگ و سنیئر نائب صدر پاکستان مسلم لیگ یوتھ ونگ پنجاب چوہدری سردار احمد نے وزیر اعلیٰ پنجاب، چیف سیکریٹری پنجاب، ڈائریکٹر نیب (بقیہ نمبر17صفحہ12پر )

پنجاب، صوبائی وزیر اریگیشن پنجاب، سیکرٹری اریگیشن پنجاب اور ڈائریکٹر جنرل اینٹی کرپشن پنجاب لاہور کو درخواستیں بھیجیں جس میں انکشاف کیا گیا تھا کہ اریگیشن ڈویژن احمد پور شرقیہ میں اس وقت دو ارب روپے سے زیادہ کی کرپشن ہو چکی ہے جس میں احمد پور شرقیہ اور لیاقت پور کی مختلف نہروں کی سائیڈوں پر نہروں کو مضبوط کرنے کیلئے پتھر لگانے تھے اس کیلئے 2 ارب روپے سے زیادہ کے فنڈز جاری ہوئے مگر موقع پر 50فیصد سے بھی کم کام کرایا گیا باقی جعلی بلوں کے ذریعے بھاری رق میں نکلوائی گئیں ۔ اسی طرح سمہ سٹہ کی توسیع کیلئے ایک کروڑ روپے کے فنڈز منظور ہوئے مگر موقع پر انتہائی ناقص میتریل استعمال کیا گیا اس میں بڑے پیمانے پر کرپشن ہوئی ہے اے بی برانچ 98 سے لیکر نوشہرہ جدید تک بڑی نہر کی سائیڈوں کو مضبوط کرنے کے لئے خطیر رقم منظور کی گئی مگر موقع پر انتہائی ناقص میٹریل کے ساتھ 50فیصد سے بھی کم کام کرایا گیا ہے بھل صفائی مہم کے دوران بھی زبردست کرپشن ہوئی ہے کروڑوں روپے فنڈ بھل صفائی کیلئے آیا مگر بھل صفائی مہم کے دوران بھی زبردست کرپشن ہوئی ہے کروڑوں روپے فنڈ بھل صفائی کیلئے آیا مگر بھل صفائی علامتی طور پر کرائی گئی ساری رقم نکلوا کر ہڑپ کر لی گئی ہے اسی طرح ڈویژن کے تمام سیکشنوں پر 6 سو سے زیادہ بیلدار عارضی رکھے گئے ان میں سے زیادہ تر جعلی ناموں سے رکھے گئے ہیں باقی جو رکھے گئے ان سے بھی رشوت وصول کرکے آرڈر جاری کئے گئے ہیں لاکھوں روپے ماہانہ جعلی ناموں سے وصول کیا جا رہا ہے اسی طرح اس وقت 5سو سے زیادہ موگے ٹوٹے ہوئے ہیں ایک سے ڈیڑھ لاکھ روپے رشوت لیکر فی موگہ توڑا گیا ہے اسی طرح عباسیہ لنک کینال پر 35سے زیادہ چھٹے لگائے گئے ہیں جس کے ذریعے پانی چوری کیا جا رہا ہے لاکھوں روپے ماہانہ جعلی ناموں سے وصول کیا جا رہا ہے اسی طرح عباسیہ لنگ کینال پر 35سے زیادہ چھٹے لگائے گئے ہیں جس کے ذریعے پانی چوری کیا جا رہا ہے لاکھوں روپے ماہانہ رشوت وصولی کی جا رہی ہے بہت سی جگہوں پر اس وقت ٹوکن کرپشن جاری ہے یعنی جو زمیندار انکو رشوت نہ دیں تو وہ موگہ سیل کر دیا جاتا ہے اور پھر وہاں پر بیلدار بٹھا دیا جاتا ہے جو زمیندار کاشتکار اس کو 2سو سے3 سو روپے گھنٹہ دے اس کا پانی کھول دیا جاتا ہے جو نہ دے اس کی باری پر بند کر دیا جاتا ہے یہ سلسلہ اس وقت سینکڑوں موگوں پر جاری ہے سیل کیا گیا موگہ جب زمیندار کھلوانے جاتے ہیں تو جرمانے کی آڑ میں 50سے70ہزار روپے وصول کرتے ہیں مگر سرکاری رسید 5 ہزار سے زیادہ نہیں کاٹی جاتی ہے اس طرح کے سینکڑوں موگے ہیں یہ کام اس وقت بھی دھڑلے سے جاری ہے ان تمام حالات کے ذمہ داران میں ایکسئین اریگیشن ڈویژن احمد پور شرقیہ ساجد محمود حال تعینات بہاولنگر ، ایس ڈی او اریگیشن کوٹلہ موسیٰ خان خالد محمود، ایس ڈی او احمد پور شرقیہ محمد طلحہ ، ایس ڈی او لیاقت پور خادم حسین ، سب انجنیئر سمہ سٹہ محمد صدیق بھٹی، سب انجنیئر احمد پور شرقیہ محمد عرفان، سن انجنیئر لیاقت پور صابر حسین ، سن انجنیئر ڈیرہ مستی غلام فرید اور سب انجنیئر لیاقت پور محمد ابراہیم شامل ہیں یہ لوگ بیلداروں کے ذریعے کام لیتے ہیں انہوں نے انکشاف کیا ہے کہ اس وقت یہ افسر کروڑوں پتی بن چکے ہیں انہار ڈویژن احمد پور شرقیہ کی تاریخ کی سب سے بڑی کرپشن کا ابھی تک سلسلہ جاری ہے جس پر وزیر اعلیٰ پنجاب نے سیکرٹری اریگیشن پنجاب کو انکوائری افسر مقرر کیا دوسری طرف ڈائریکٹر اینٹی کرپشن بہاولپور ریجن بہاولپور نے ڈپٹی ڈائریکٹر لیگل نعمان اشرف کو انکوائری آفیسر مقرر کیا جنہوں نے تحقیقات مکمل کرکے متعلقہ آفسیران کو ریکارڈ سمیت طلب کیا ہے تا کہ موقع پر جا کر ان کی کرپشن کا جائزہ لیا جا سکے مگر پیشیاں گزر چکی ہیں کوئی بھی افیسر ریکارڈ لے کر پیش نہیں ہوا ہے کیونکہ افسیران تذبذب کا شکار ہیں کہ ریکارڈ میں ہی تو سارے کھپلے کیئے ہوئے ہیں ریکارڈ جب موقع پر جائے گا تو ساری کرپشن پکڑی جائے گی اس موقع پر چوہدری سردار احمد نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ تمام آفیسران ایریگیشن بہت با اثر ہیں دو ارب سے زیادہ کی کرپشن موجود ہے اور مزید یہ سلسلہ روزانہ کی بنیاد پرجاری ہے کوئی پوچھنے والا نہیں ہے محکمانہ انکوائری خفیہ ہاتھوں نے دبا رکھی ہے انہوں نے کہا کہ میں نے بھی بہت سارا ریکارڈ اکٹھا کر لیا ہے ان افیسران کے سارے کرتوتوں کے ثبوت میرے پاس موجود ہیں میں بہت جلد وزیر اعلیٰ پنجاب سے ملاقات کرکے ان کو ثبوت مہیا کروں گا ان کرپٹ افیسران اریگیشن کو کیفر کردار تک پہنچاءوں گا اس سلسلہ میں جب ایکسئین ایریگیشن سے رابطہ کیا گیا تو انہوں نے کہا کہ الزامات درست ہیں ہے مصروفیت کی وجہ سے پیش نہیں ہو سکے آئندہ پیشی پر سارا ریکارڈ ایکسئین ساجد محمود حال تعینات بہاولنگر پیش کر دیا جائے گا ۔

2 ارب کرپشن

مزید :

ملتان صفحہ آخر -