بدعنوان عناصت کو قانون کے مطابق منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا: چیئر مین نیب 

بدعنوان عناصت کو قانون کے مطابق منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا: چیئر مین ...

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس جاوید اقبال نے کہا ہے کہ نیب عوام کی بدعنوانی سے متعلق شکایات کا قانون اور شواہد کے مطابق جائزہ لے رہا ہے اوربدعنوان عناصرکو قانون کے مطابق منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے نیب ہیڈ کوارٹرز میں کھلی کچہری میں ملک بھر سے آنے والے شکایا ت کنندہ گان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔چیئرمین نیب نے سائلین کی بد عنوانی سے متعلق شکایات سنیں اور موقع پر قانون کے مطابق ضروری احکامات جاری کئے۔ شکایات کنندہ گان چیئرمین نیب جسٹس جاوید اقبال کی ملک سے بدعنوانی کے خاتمے کیلئے کی جانے والی کاوشوں کو سراہا۔چیئرمین نیب نے کہا کہ ملک سے بدعنوانی کاخاتمہ اور عوام کی لوٹی ہوئی رقم کی واپسی نیب کی اولین ترجیح ہے،نیب نے بدعنوان عناصر سے عوام کی لوٹی ہوئی تقریباََ 326 ارب روپے کی رقم برآمد کرکے قومی خزانے میں جمع کروائی ہے جو کہ ایک ریکارڈ کامیابی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مضاربہ اور مشارکہ سکینڈلز میں ہزاروں افراد کی لوٹی گئی رقم کی واپسی کیلئے نیب سنجیدہ اقدامات اٹھا رہا ہے اور اب تک43 بڑے ملزمان کی گرفتاری عمل میں لائی جاچکی ہے جن میں سے بعض مقدمات کا فیصلہ ہو چکا ہے جبکہ مضاربہ اور مشارکہ سکینڈلز کے دیگر مقدمات احتساب عدالتوں میں زیر سماعت ہیں۔قومی احتساب بیورو کے چیئرمین جسٹس جاوید اقبال نے نیب کے افسران اور اہلکاروں کو ہدایت کی کہ عوام کی بدعنوانی سے متعلق تمام شکایات کو کمپیوٹر ائزڈ کرنے کے علاوہ تمام شکایات کنندگان کو ان کی شکایات کی وصولی کی اطلاع کے علاوہ ان کی شکایات کو قانون کے مطابق منطقی انجام تک پہنچایا جائے اور تمام شکایات کنندہ گان کے ساتھ خوش اخلاقی سے پیش آنے کے علاوہ ان کی عزت نفس کا ہمیشہ خیال رکھا جائے اس سلسلہ میں کوئی کوتائی برداشت نہیں کی جائے گی۔

چیئرمین نیب

مزید :

صفحہ اول -