ڈاؤ یونیورسٹی،ہینڈ زر ایجوکاسٹ کے مابین مفاہمتی یادداشت پر دستخط

ڈاؤ یونیورسٹی،ہینڈ زر ایجوکاسٹ کے مابین مفاہمتی یادداشت پر دستخط

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)طبی تعلیم کے لیے ملک و بیرونِ ملک نمایاں مقام رکھنے والی ڈاؤ یونیورسٹی، صحت وتعلیم کے شعبے میں کام کرنے والی این جی او ہینڈز (ہیلتھ اینڈ نیوٹریشن ڈیولپمنٹ سوسائٹی) اور تکنیکی مہارت کے حامل نجی ادارے ایجوکاسٹ کے درمیان پاکستان کے 40اضلاع میں ای ڈاکٹرز کے ذریعے ٹیلی میڈیسن اور صحت کی دیگر سہولتیں فراہم کرنے کے لیے مفاہمت کی یادداشت (ایم او یو) پر دستخط ہوگئے، مفاہمت کی یاد داشت پر دستخط کی تقریب ڈاؤ یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز میں منعقد ہوئی، اس موقع پر یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر محمد سعید قریشی، پرو وائس چانسلرز اور ای ڈاکٹر پروگرام کی ہیڈ پروفیسر زرناز واحد بھی موجود تھیں، ایم او یو پر ڈاؤ یونیورسٹی کی جانب سے رجسٹرار پروفیسر امان اللہ عباسی، ہینڈز کی جانب سے چیف ایگزیکٹو ڈاکٹر شیخ تنویر اور ایجوکاسٹ کی جانب سے عبداللہ بٹ نے دستخط کیے،مفاہمت کے مطابق ڈاؤ یونیورسٹی کے زیرِ اہتمام پاکستان کے مختلف طبی تعلیمی اداروں سے فارغ التحصیل لیڈی ڈاکٹرز کو ای ڈاکٹرز پروگرام کے ذریعے طب کے شعبے میں واپس لانے کے پروگرام کو ہینڈز کے ذریعے وسعت دی جائے گی، اس سلسلے میں ہینڈز ملک کے مختلف اضلاع میں سماجی شعبے میں موجود اپنے نیٹ ورک کے ذریعے ای ڈاکٹر کی سہولت عام مریض تک پہنچائے گی،یاد رہے کہ ڈاؤ یونیورسٹی کے زیرِ اہتمام ای ڈاکٹرز پروگرام کے تین بیجز کے ذریعے شعبہ طب سے دور500سے زائد ڈاکٹرز کو تربیت دے کر دوبارہ صحت کی سہولتوں سے وابستہ کر دیا گیا ہے، مفاہمت کے مطابق ہینڈز (ہیلتھ اینڈ نیوٹریشن ڈیولپمنٹ سوسائٹی) ای ڈاکٹر پروگرام کے فوائد عام مریض تک پہنچانے کے لیے اپنے ذرائع اور ڈونر ایجینسز کے ذریعے مختلف پروجیکٹ بنائے گی، جبکہ ڈاؤ یونیورسٹی اس ضمن میں مختلف سرٹیفکیٹس کورس ترتیب دے کر ڈاکٹرز کو تربیتی و تدریسی سہولتیں فراہم کرے گی اور ایجوکاسٹ اپنی ٹیکنکل سپورٹ کے ذریعے اس پروجیکٹ کو پایہ تکمیل تک پہچائیگی۔مجوزہ پروجیکٹس کے ذریعے دنیا بھر میں موجودہ پاکستان کے ای ڈاکٹرز کو لائیو و ڈیولنک کے ذریعے پاکستان کے پسماندہ علاقوں کے لوگوں کو چوبیس گھنٹے علاج کی سہولت فراہم کی جائے گی اور ای ڈاکٹرز گھر بیٹھے مریضوں کامعائنہ اور انہیں دوائیں تجویز کر سکیں گے، اس موقع پر فریقین نے اس عزم کا اظہار کیا کہ ملک میں علاج کی سہولتیں عام لوگوں کی دہلیز تک پہنچانے میں کوئی کسر اٹھا نہیں رکھی جائے گی۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -