گورنرہاؤس سندھ میں اجلاس، منصوبوں میں پیش رفت کا جائزہ

گورنرہاؤس سندھ میں اجلاس، منصوبوں میں پیش رفت کا جائزہ

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر) گورنر سندھ عمران اسماعیل کا وفاقی وزیر برائے منصوبہ بندی و ترقیات اسد عمر کے ساتھ وفاقی حکومت کے جانب سے شروع کئے گئے صوبہ کے ترقیاتی منصوبوں کے حوالہ سے اجلاس ہوا، وفاقی وزیر نج کاری محمد میاں سومرو بھی اجلاس میں موجودتھے۔اجلاس میں اراکین قومی اسمبلی آفتاب صدیقی اور نجیب ہارون اسلام آباد سے جبکہ اراکین صوبائی اسمبلی فردوس شمیم نقوی،حلیم عادل شیخ،حسنین مرزا،سعید آفریدی کراچی سے شریک ہوئے۔اجلاس میں ثمر علی خان،عدنان اصدر،اشرف قریشی اور متعلقہ افسران نے بھی شرکت کی۔اجلاس میں صوبہ سندھ میں تعمیر وترقی کے وفاقی منصوبوں میں پیش رفت کا جائزہ لیا گیا اورشہر قائد میں پانی اور انفراسٹرکچر کے منصوبوں کی جلد از جلد تکمیل کے اقدامات پر بھی غورکیا گیا۔ اس موقع پر گورنرسندھ نے کہاکہ وفاقی حکومت کو صوبہ سندھ کے عوام کو درپیش مسائل کا مکمل ادراک ہے سندھ کے عوام کو تنہا نہیں چھوڑیں گے، وفاقی حکومت صوبہ کی ترقی میں اپنا کردار ادا کرتی رہے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ گرین لائن کی بسیں اس سال دسمبر سے آنا شروع ہو جائیں گی جبکہ کے فور کراچی کے شہریوں کو پانی کی فراہمی کا اہم منصوبہ ہے اسے ہر حال میں مکمل کریں گے۔ گورنرسندھ نے مزید کہا کہ سندھ انفرا اسٹرکچر ڈیولپمنٹ کمپنی کی صلاحیت بڑھانے کیلئے اقدامات کئے جائیں گے۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر اسد عمر نے کہا کہ وزیر اعظم کی ہدایت پر صوبہ سندھ کے ترقیاتی منصوبوں کو خصوصی اہمیت دی جارہی ہے کے فور پر ریویو کمیٹی کی رپورٹ پر 4 ماہ گذرنے کے باوجود حکومت سندھ کی ٹیکنیکل کمیٹی کی سفارشات ابھی تک وفاقی حکومت کو موصول نہیں ہوئی ہیں اس کے باوجود وفاقی حکومت کے فور منصوبہ کے ضمن میں اپنی ذمہ داریاں پوری کرے گی۔

مزید :

صفحہ اول -