آن لائن یا دفتر میں بکنگ ہوگی گوشت گھر گھر یا مراکز پر تقسیم ہوگا،افتخارشلوانی

آن لائن یا دفتر میں بکنگ ہوگی گوشت گھر گھر یا مراکز پر تقسیم ...

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)کراچی انتظامیہ شہر کی معروف فلاحی تنظیموں کے ذریعے شہر کے مختلف مقامات پر اجتماعی قربانی کے انتظامات کرے گی۔ ہفتہ کو کمشنر کراچی کے دفتر میں کمشنر کراچی افتخار شالوانی کی زیر صدارت معروف فلاحی تنظیمون کا ایک اجلاس ہوا۔ اجلاس میں ایدھی، چھیپا، سیلانی، الخدمت، جامعہ بنوریہ سائٹ اور دعوت اسلامی و دیگر کے نمائندوں نے شر کت کی۔اجلاس میں قربانی کی رجسٹریشن اور قربانی کے انتظامات، دیگر امور کے انتظامات کا جایزہ لیا گیا۔ فیصلہ کیا گیا کہ علاقہ کے ڈپٹی کمشنرز ان انتظامات کی نگرانی کریں گے۔ اور متعلقہ فلاحی تنظیموں کو ضروری معاونت و رہنمائی کریں گے۔ جن تنظیموں کو جگہ کی دشواری ہوگی ضلعی انتظامیہ انھیں جگہ کی فراہمی میں ہر ممکنہ مدد کرے گی۔ کمشنر نے تمام ڈپٹی کمشنرز سے کہا ہے کہ وہ قربانی کے انتظامات کے سلسلہ میں فلاحی تنظیموں کی ہر ممکنہ مدد کریں۔اجلاس میں موجود فلاحی تنظیموں کے نمائندوں نے کمشنرکراچی کے اقدام کو سراہا اور اس عزم کا اظہار کیا کہ وہ کورونا کی صورتحال اور شہریوں کی ضرورت کے پیش نظر اس سال قربانی کے خصوصی انتظامات کریں گی اس سال انتظامات کا دائرہ وسیع کیا جائے گا۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ تنظیمیں ا ٓن لائن سروس بھی فراہم کریں گی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ اجلاس میں جو فلاحی تنظیمیں موجود نہیں ہیں ان سے بھی رجوع کیا جائے گا اور انھیں بھی اس فلاحی کام میں شامل کیا جائے گا۔فیصلہ کیا گیا کہ قربانی کے جانوروں کی آن لائن یا تنظیموں کے مراکز میں بکنگ کی جائے گی۔ تنظیمیں قربانی کے خواہاں فرد کے گھر گوشت خود پہنچائیں گی یا وہ بکنگ کنندہ تنظیم کے علاقائی دفتر سے حاصل کرسکیں گے اتفاق کیا گیا کہ تمام تنظیمیں آن لائن لنک یا دیگر تفصیلات مختلف ذرائع سے مشتہر کریں گی۔ کراچی انتظامیہ کی جانب سے بھی قربانی کے انتظامات کی جامع تفصیلات میڈیا کو جلد جاری کی جائیں گی کمشنر کراچی افتخار شالوانی نے شہریوں سے اپیل کی ہے کہ وہ فلاحی تنظیموں کے مذہبی جذبہ سے کی جانے والی کو شش کو سراہیں اور اس سے استفادہ کریں اس سے شہریوں کو ایک صاف ستھرے اور منظم طریقہ سے مذہبی فریضہ کی ادائیگی میں سہولت میسر آئے گی اور شہر میں جگہ جگہ گلیوں اور سڑکوں پر قربانی کر نے کی بھی حوصلہ شکنی ہو گی اور۔ شہر کو صاف ستھرا رکھنے میں ھی مدد ملے گی

مزید :

صفحہ آخر -