نئے ٹیکس لگنےسے قبل سعودی سرمایہ کاروں نے دھڑا دھڑ کیا چیز خریدنا شروع کردی؟ پاکستانیوں کیلئے پریشان کن خبر

نئے ٹیکس لگنےسے قبل سعودی سرمایہ کاروں نے دھڑا دھڑ کیا چیز خریدنا شروع کردی؟ ...
نئے ٹیکس لگنےسے قبل سعودی سرمایہ کاروں نے دھڑا دھڑ کیا چیز خریدنا شروع کردی؟ پاکستانیوں کیلئے پریشان کن خبر

  

ریاض(ڈیلی پاکستان آن لائن)سعودی حکومت کی جانب سےپندرہ فیصد  ویلیو ایڈڈ ٹیکس نافذکرنے کے اعلان کے بعدسعودی سرمایہ کاروں نے دھڑا دھڑ سونا خریدنا شروع کردیاہے۔

سونے کی طلب میں اضافے سے اس کی قیمت نہ صرف سعودی عرب بلکہ دیگر ممالک میں بھی مزید بڑھنے کاامکان ہے۔ طلب اور قیمت میں اضافہ پاکستانی شہریوں کے لیے سونے کی خریداری مزید مشکل بناسکتا ہے جہاں پہلے ہی اس کی فی تولہ قیمت ایک لاکھ روپے سے تجاوز کرچکی ہے۔

حکومتی اعلان کے بعد سونے کی دکانوں پر رش بڑھ چکا ہے۔ عرب نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے ریاض کے ایک سونے کے تاجر یاسین علی نے کہا ہے کہ دکانوں پر رش وباکے دنوں سے پہلے سے  بھی زیادہ ہے۔ انہوں نے کہا دکانوں پر ان کی توقع سے کہیں زیادہ لوگ آرہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ کرفیو کے خاتمے کے ساتھ ویلیو ایڈڈ ٹیکس میں اضافے کے حکومتی فیصلے نے سونے کی خریداری میں بھی اضافہ کردیا ہے۔جس سے مارکیٹ میں بہتری آئی ہے۔

ورلڈ گولڈ کونسل کے مطابق وبا کے دنوں میں سونے کی مارکیٹ اور زیورات کی خریداری پر بہت برااثر پڑا۔ رواں سال کے آغاز میں ہی اس کی خریدوفروخت میں  39فیصد کمی ہوئی ہے۔شادی بیاہ اور دیگر تقریبات پر پابندیوں نے بھی اس مارکیٹ پر اثر ڈالا۔  اس سب کے باوجود  لوگوں نے سونے کی سرمایہ کاری کو محفوظ سمجھتے ہوئے اس میں حصہ لیا۔

ریاض ہی کے ایک اور جیولر ابراہیم کا کہنا ہے کہ لاک ڈاون سے پہلے والی صورتحال ابھی پوری طرح بحال نہیں ہوسکی تاہم امید ہے کہ اس ہفتے اس میں مزید بہتری آجائے گی۔

خیال رہے سعودی عرب اپنے ملک میں تمام اشیا پر  ویلیو ایڈڈ ٹیکس میں تین گنا اضافہ کرنے جارہاہے اور و ہ اسے پانچ سے پندرہ فیصد  کرنے کااعلان کرچکا ہے جو آئندہ ہفتے سے نافذ العمل ہوگا۔

اس ڈیڈ لائن کی وجہ سے نہ صرف سرمایہ کاروں نے بلکہ عام لوگوں نے بھی سونے اور زیورات کی خریداری بڑھا دی ہے۔رپورٹ کے مطابق اس وقت سونے کی قیمت آٹھ سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ چکی ہے اور اس کی فی تولہ قیمت 1779 ڈالر تک پہنچ چکی ہے۔

مزید :

بزنس -