پی ٹی آئی حکومت کے دو سالہ دور کی آڈٹ رپورٹ تیار ،270ارب روپے کی بدعنوانیوں اوربے ضابطگیوں کاانکشاف

پی ٹی آئی حکومت کے دو سالہ دور کی آڈٹ رپورٹ تیار ،270ارب روپے کی بدعنوانیوں ...
پی ٹی آئی حکومت کے دو سالہ دور کی آڈٹ رپورٹ تیار ،270ارب روپے کی بدعنوانیوں اوربے ضابطگیوں کاانکشاف

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پی ٹی آئی حکومت کے دورمیں تیارہونے والی پہلی آڈٹ رپورٹ میں وفاقی وزارتوں اورمحکموں میں 270ارب روپے کی بدعنوانیوں اوربے ضابطگیوں کاانکشاف ہوا ہے۔

نجی ٹی وی جیو نیوز کے مطابق وفاقی آڈیٹرجنرل نے20-2019کی آڈٹ رپورٹ تیارکرلی ہے،آڈٹ رپورٹ کے مطابق 2019-20 میں 40وفاقی وزارتوں اورمحکموں کاآڈٹ کیاگیا،وفاقی وزارتوں اورمحکموں میں 270ارب روپے کی بدعنوانیوں اوربے ضابطگیوں کاانکشاف ہوا ہے۔

آڈٹ رپورٹ میں کرپشن اورجعلی رسیدوں کی مدمیں 12ارب 56کروڑروپے کی بدعنوانیوں کی نشاندہی کی گئی ہے۔آڈیٹر جنرل نے کہاہے کہ کمزور مالیاتی مینجمنٹ کے 152ارب 20کروڑروپے کے کیسزسامنے آئے،کمزورانٹرنل کنٹرول کے8ارب 89کروڑروپے مالیت کے کیسز سامنے آئے ،سرکاری اداروں نے17ارب 96کروڑروپے کاریکارڈآڈیٹرجنرل کے حوالے نہیں کیا،

آڈیٹر جنرل نے کہاہے کہ پارلیمنٹ کی منظوری کے بغیرسرکاری اداروں کواخراجات کرنے سے روکاجائے،پارلیمنٹ کی منظوری کے بغیر سپلیمنٹری گرانٹس جاری کرنے کاسلسلہ روکاجائے،کرپشن کے کیسزتحقیقاتی اداروں کے سپردکیے جائیں۔

مزید :

قومی -علاقائی -اسلام آباد -