چارٹرڈ آف ڈیموکریسی پردستخط لوٹ مار کا مشترکہ منصوبہ تھا،شہباز گل نے اپوزیشن کو آڑے ہاتھوں لے لیا 

چارٹرڈ آف ڈیموکریسی پردستخط لوٹ مار کا مشترکہ منصوبہ تھا،شہباز گل نے ...
چارٹرڈ آف ڈیموکریسی پردستخط لوٹ مار کا مشترکہ منصوبہ تھا،شہباز گل نے اپوزیشن کو آڑے ہاتھوں لے لیا 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر اعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل نے اپوزیشن کی مشترکہ پریس کانفرنس  کو افسردہ سی پریس کانفرنس قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ ہم پہلےدن سے کہہ رہے تھے یہ ایک ہی سکے کےدو رخ ہیں،چارٹرڈ آف ڈیموکریسی پردستخط لوٹ مار کا مشترکہ منصوبہ تھا۔

اسلام آباد میں بلاول بھٹو زردار،خواجہ محمد آصف،اکرم خان درانی،اور میاں محمد اسلم سمیت اپوزیشن کی مشترکہ پریس کانفرنس پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے ڈاکٹر شہباز گل کا کہنا تھا کہ آج اپوزیشن کی ایک افسردہ سی پریس کانفرنس دیکھی, ہم پہلےدن سے کہہ رہے تھے یہ ایک ہی سکے کےدو رخ ہیں۔انہوں نے کہا کہ ان کو این آر او چاہیےاس لیےبجٹ کو جھٹلا رہے ہیں،کچھ بھی کر لیں عمران خان آپ کو این آر او نہیں دینے والا۔ڈاکٹر شہباز گل نے کہا کہ چارٹرڈ آف ڈیموکریسی پردستخط لوٹ مار کا مشترکہ منصوبہ تھا،آج اس کی عملی شکل خواجہ آصف اوربلاول کی صورت میں بیٹھی نظرآ رہی ہے،نیب ایک آزاد ادارہ ہےجو اپنا کام کر رہا ہے۔

مزید :

قومی -