14ماہ میں معاشی استحکام لانے کی کوشش کریں گے،جمع ہونے والا پیسہ ضائع نہیں ہوگا، وزیراعظم

14ماہ میں معاشی استحکام لانے کی کوشش کریں گے،جمع ہونے والا پیسہ ضائع نہیں ...
14ماہ میں معاشی استحکام لانے کی کوشش کریں گے،جمع ہونے والا پیسہ ضائع نہیں ہوگا، وزیراعظم

  

 اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن ) وزیراعظم شہباز شریف کا کہنا ہے کہ 14ماہ میں معاشی استحکام لانے کی کوشش کریں گے ، صاحب ثروت حضرات نے سپر ٹیکس کو قبول کیا  اس سے اکٹھا ہونے والے پیسے کو ضائع نہیں ہونے دیں گے۔

نجی ٹی وی "ایکسپریس نیوز "کے مطابق کنونشن سنٹراسلام آباد میں "ٹرن اراوٴنڈ پاکستان "کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم شہباز شریف نے کہا کہ ہماری اصل منزل خود انحصاری ہے، فیصلوں پرمشاورت جمہوری عمل ہے، سپر ٹیکس سے  230 ارب روپے اکٹھے ہوں گہ جو کہ ملکی ترقی و خوش حالی کےلیے استعمال ہوں گے، سرکاری اخراجات پر خرچ نہیں کیا جائے گا، 14 ماہ میں معاشی استحکام لانے کی کوشش کریں گے، معاشی استحکام  سیاسی  استحکام سے  جڑا ہے۔

انہوں نے کہا کہ خود انحصاری ہی قوم کی سیاسی، معاشی آزادی کی ضمانت ہے، بنگلہ دیش میں 6 ارب ڈالر کی لاگت سے بڑا انفرا اسٹرکچر بنایا گیا، پاکستان میں وسائل اور ہنرمند لوگوں کی کمی نہیں، ریکوڈک میں اربوں روپے کا خزانہ دفن ہے، ابھی تک ہم نے ایک دھیلہ نہیں کمایا مگر اربوں روپے ضائع ہو گئے، مقدمات کی مد میں ہم نے اربوں روپے ضائع کیے۔

رپورٹ کے مطابق وزیر اعظم نے کہا کہ 75 سال ہوگئے، بلند و بانگ دعوے کیے لیکن عمل سے دامن خالی ہے، اس حمام میں ہم سب ننگے ہیں، مجھ سمیت ہم سب کی ذمہ داری ہے، لیکن رونے سے بات نہیں بنے گی، ایسے فیصلے کرنے ہوں گے جنہیں مدتوں تک کوئی بدل نہ سکے۔

شہباز شریف نے مزید کہا کہ پوری دنیا اس وقت معاشی بحران کا شکار ہے، گزشتہ حکومت نے گیس کے سستے اور لانگ ٹرم معاہدے نہیں کیے، گزشتہ حکومت نے ترقیاتی منصوبوں کو التوا کا شکار رکھا، بہت بڑے  چیلنجز  کا سامنا ہے  ،کیاکیابتاؤں مگر حل کرنے کے لیے پرعزم ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ اگر کام کرنے کی نیت ہو تو راستے خود بن جاتے ہیں، اتحادی حکومت پاکستان کے چاروں صوبوں پر محیط ہے، ہمیں اپنی ذاتی پسند ونا پسند سے بالاتر ہو کر ملک کی ترقی کیلئے کام کرنا ہوگا، ریڈ ٹیپ ازم، پرمٹ راج اور این او سی کے چکروں کو ختم کرنا چاہتا ہوں۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -