ایلون مسک کی بیٹی کو  نام بدلنے کی منظوری مل گئی 

ایلون مسک کی بیٹی کو  نام بدلنے کی منظوری مل گئی 
ایلون مسک کی بیٹی کو  نام بدلنے کی منظوری مل گئی 
سورس: Wikimedia Commons

  

نیویارک (ویب ڈیسک) امریکی عدالت نے ٹیسلا کے سربراہ، معروف کاروباری شخصیت ایلون مسک کی ٹرانس جینڈر بیٹی کا نام تبدیل کرنے کی منظوری دے دی۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق لاس اینجلس کی عدالت نے ایلون مسک کی 18 سالہ بیٹی کے نام میں سے’ مسک‘ کا لفظ ہٹانے کی منظوری دے دی، اب وہ اپنے نام کے آخر میں والدہ کا نام لکھیں گی۔ویوین جینا ولسن جس کو پہلے زاویار الیگزینڈر مسک کے نام سے جانا جاتا تھا نے عدالت میں درخواست دائر کی تھی کہ میرے نام کے ساتھ میرے والد ایلون مسک کا نام ہٹایا جائے۔

واضح رہے کہ ایلون مسک کی ٹرانس جینڈر بیٹی زاویار الیگزینڈر مسک نے یہ درخواست اپریل 2022ء میں لاس اینجلس کی ایک عدالت میں جمع کرائی تھی۔ایلون مسک کی منحرف بیٹی زاویار نے عدالت میں درخواست جمع کرواتے ہوئے مؤقف اپنایا تھا کہ وہ اپنی صنفی شناخت مرد سے عورت میں بدلنے کے لیے نیا نام رجسٹر کرانا چاہتی ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -