گجومتہ میں عرصہ دراز سے قبضہ شدہ اراضی نیلامی کے ذریعے فروخت

گجومتہ میں عرصہ دراز سے قبضہ شدہ اراضی نیلامی کے ذریعے فروخت


لاہور(اپنے نمائند ہ سے )اسسٹنٹ کمشنر شالیمار کی حکمت عملی کام کر گئی گجومتہ اورمو ہلنوال میں عرصہ دراز سے قبضہ شدہ اراضی نیلامی کے ذریعے فروخت کر وا دی روزنامہ پاکستان کو ملنے والی معلومات کے مطابق پٹوار سرکل گجو متہ میں واقع ایگریکلچر لینڈٖ جس کا رقبہ تعدادی3 کنال سے زائد ہے عرصہ دراز سے علاقے کے مقامی شہری کے زیر قبضہ تھی اور سرکل میں تعینات رہنے والے حلقہ پٹواری نے اس زمین کو بنجر اور غیر معمولی قرار دیکر قابضین کے حوالے کر رکھا تھا محکمہ ریونیو کے اعلیٰ افسران کی جانب سے بار بار اس سرکاری جائیداد کو واہ گزار کرواتے ہوئے نیلامی کی تاکید کی جاتی رہی مگر حلقہ پٹواریوں کا کہنا تھا کہ غیر آباد جگہ کی قیمت3 لاکھ سے زائد نہیں اسطرح منوریل میں موجود6 کنال رقبہ تعدادی بھی قبضہ شدہ پائی گئی ان جائیدادوں کی فہرست اسسٹنٹ کمشنر شالیمار عاصم سلیم کے پاس پہنچی تو مذکورہ آفیسر نے موقع ملاحظہ کرتے ہوئے قابضین کو وارننگ دی کہ وہ اراضی کو خالی کر دیں ورنہ تاوان اور آبیانہ کی مد میں 10 لاکھ روپے جرمانہ دیناہو گا کیوں کہ عرصہ دراز سے آپ نے سرکاری اراضی استعمال کی ہے جس پر موقع پر قابضین افراد نے اس جائیداد کو نیلامی میں خرید کرنے کی حامی بھری اور گزشتہ روز ٹاؤن ہال میں ہونے والی نیلامی کے دوران ان دونوں جائیدادوں کو100فی صد مارکیٹ ریٹس پر فروخت کر دیا گیا6 کنال اراضی کی8لاکھ25ہزار جبکہ3 کنال زرعی اراضی واقع گجو متہ19 لاکھ50 ہزار میں فروخت پا گئی دوسری جانب اسسٹنٹ کمشنر شالیمار کی جانب سے کی جانے والی اس ورکنگ کو انتہائی مفید اور قابل داد تصور کیا جا رہا ہے

مزید : میٹروپولیٹن 1