چرس بیچنے سے منع کرنے پر تین بچوں کا باپ قتل

چرس بیچنے سے منع کرنے پر تین بچوں کا باپ قتل
چرس بیچنے سے منع کرنے پر تین بچوں کا باپ قتل

  


لا ہور (شعیب بھٹی)تھانہ لیاقت آباد کے علاقہ میں منشیا ت فرو ش گروہ کے 5افراد نے چرس بیچنے سے منع کرنے پر 3بچوں کے باپ کو گولیاں مار کر موت کے گھاٹ اتاردیااور موقع سے فرار ہوگئے ۔پولیس نے لا ش کو پو سٹ ما ر ٹم کے لئے مر د ہ خانے بھجوکر پانچوں ملزمان کے خلا ف مقد مہ در ج کرلیا ہے تاحال پولیس کسی بھی ایک ملزم کو گرفتار کرنے میں ناکام رہی ہے۔تفصیلا ت کے مطا بق تھانہ لیاقت آباد محلہ آرائیاں چھوٹی پھاٹکی کوٹ لکھپت کے رہائشی 45سا لہ محنت کش محمد خالد کے محلہ میں منشیا ت فرو ش نجیب ،حسیب،قدوس،شہزاد ا، شعیب اور رؤف عرصہ دراز سے منشیا ت بیچنے کا مکروہ دھندہ کررہے ہیں ۔پولیس کے مطابق گزشتہ روز خالد نے مذکورہ افراد کو منشیات بیچنے سے منع کیا جس پر انکی تلخ کلامی ہوگئی اور انہوں نے طیش میں آکر اسے فائرنگ کرکے زخمی کردیا اور موقع سے فرار ہوگئے ۔مقامی افراد نے زخمی کو فوری طبی امداد کے لئے ہسپتال پہنچایا جہاں پر وہ چند گھنٹے زندگی و موٹ کی کشمکش میں مبتلا رہنے کے بعد دم توڑ گیا۔اس حوالے سے مقتول کے بھا ئی نے نمائندہ \"پاکستان \"سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ملزمان قدو س اور نجیب سمیت انکے دیگر ساتھی علاقے میں منشیا ت فرو خت کر کے نوجوان نسل کو اس لعنت میں مبتلا کررہے ہیں اور اسی کو ختم کرنے کے لئے اسکے بھائی نے انہیں پہلے بھی منع کیا تھا جس پرانہوں نے اسے فائرنگ کرکے زخمی کردیا تھا لیکن بعدازں مقامی رہائشیوں نے صلح صفائی کروادی تھی تاہم گزشتہ روز مذکورہ ملزمان نے اسکے بھائی کی زندگی ہی چھین لی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ مذکورہ تمام افراد عادی مجرم ہیں اور متعدد مقدمات پہلے بھی انکے خلاف مختلف تھانوں میں درج ہیں

اور انہیں پولیس کی سرپرستی بھی حاصل ہیں ۔متاثرہ خاندان نے وزیراعلی پنجاب اور پولیس حکام سے اپیل کی ہے کہ ملزمان کو فوری گرفتار کرکے قرار واقع سزا دلواکر انہیں انصاف فراہم کیا جائے۔اس حوالے سے پولیس کا کہنا ہے کہ ملزمان کی گرفتاری کے لئے چھاپے مارے جارہے ہیں جنہیں جلد ہی گرفتار کرلیا جائے گا۔

مزید : جرم و انصاف