چین کا ہوٹل ،امریکی خاتون اول کیلئے سستا،نائب صدر کیلئے مہنگا

چین کا ہوٹل ،امریکی خاتون اول کیلئے سستا،نائب صدر کیلئے مہنگا
چین کا ہوٹل ،امریکی خاتون اول کیلئے سستا،نائب صدر کیلئے مہنگا

  


بیجنگ (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ کی خاتونِ اول مشل اوباما اس وقت اپنے بچوں کے ہمراہ چین کے سات روزہ دورے پر ہیں جسے غیر رسمی سفارتی دورہ قرار دیا جارہا ہے۔ اس دورے میں وہ جس کمرے میں رہائش پذیر ہیں اس کا ایک رات کا کرایہ عموماً 8,400 ڈالر (قریباً ساڑھے آٹھ لاکھ پاکستانی روپے) بتایا جاتا ہے۔ اس ہوٹل کا نام ویسٹن ہوٹل ہے اور یہ بیجنگ میں امریکی ایمبیسی کے نزدیک واقع ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ گزشتہ برس دسمبر میں جب امریکی نائب صدر نے چین کا دورہ کیا تو اسے ان کے لئے انتہائی مہنگا قرار دیا گیا تھا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق نائب صدر بائیڈن کے لئے اس ہوٹل میں صدارتی سویٹ بک کرانے کی تجویز پیش کی گئی تھی لیکن امریکی انتظامیہ نے موقف اختیار کیا کہ اس کا کرایہ دوسرے آپشن 'سینٹ ریجنٹس ہوٹل' سے بہت زیادہ زیادہ ہے لہٰذا بہتر ہے کہ یہاں رہائش اختیار نہ کی جائے۔ اس کے بعد بائیڈن کو سینٹ ریجنٹس ہوٹل میں رہائش اختیار کرنا پڑی تھی۔ ابھی تک یہ واضح نہیں کہ مشعل اوبامہ کے کمرے کا کرایہ کتنا ادا کیا جارہا ہے لیکن بین الاقوامی میڈیا اس بات پر حیران ہے کہ جس کمرے کا بل نائب صدر نہیں دے سکا خاتونِ اول اس میں کسیے ٹھہر گئیں؟

مزید : صفحہ آخر