خاتون نے’’ تعلقات ‘‘کی خواہش پر مبنی ریکارڈنگ عدالت میں پیش کر دی

خاتون نے’’ تعلقات ‘‘کی خواہش پر مبنی ریکارڈنگ عدالت میں پیش کر دی

ملتان (خبر نگار خصوصی) ایف آئی اے کی سنٹرل کورٹ نے مقدمہ کی مدعیہ خاتون کو حراساں کرنے پر فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی کے متعلقہ حکام کے خلاف سماعت 10اپریل تک ملتوی کر دی۔ عدالت میں درخواست دائر کرتے ہوئے لیاقت پور کی رہائشی خاتون آسیہ رشید نے موقف اختیار کیا کہ اس کی نند کے شوہر ریاض نے علاقہ کے لوگوں بیرون ملک بھجوانے کا جھانسہ دیکر عزیز احمدٹریول ایجنٹ کے ذریعہ 16لاکھ روپے لوٹے۔ جس پر ایف آئی اے ملتان آفس میں مقدمہ درج ہوا۔ فیڈرل انویسٹی گیشن کے افسران ممتاز ڈوگر اور عابد گل ملزم گرفتار کرنے کیلئے رشوت وصول کرتے رہے۔ مقدمہ کی تفتیش کے دوران اسسٹنٹ ڈائریکٹر لیگل ممتاز ڈوگر نے اپنے پرائیویٹ ملازم اجمل کے ذریعہ رابطہ کیا اور تعلقات قائم کرنے کا کہا۔ سائلہ کے انکار پر نہ صرف مرکزی ملزم کو چھوڑ دیا گیا۔بلکہ الٹا سائلہ کوحراساں کرنا شروع کر دیا۔ اس موقع پر درخواست گزارنے موبائل فون کا ڈیٹا بھی عدالت کے سامنے پیش کیا۔ جس کے مطابق اسسٹنٹ ڈائریکٹر لیگل کا ملازم اسے وقت صاحب کے ساتھ وقت گزارنے پر مجبور کر رہا ہے۔ ریکارڈنگ کے مطابق مدعیہ کو کیا گیا اگر اس نے صاحب کی خواہشات پوری نہ کیں تو ملزم کو چھوڑ دیا جائے گا اور تمام کارروائی مدعیہ کے خلاف کی جائے گیاور سنگین نتائج بھگتنا ہوں گے۔ گذشتہ روز فاضل عدالت نے مدعیہ کی درخواست پر کارروائی کرتے ہوئے سماعت 10اپریل تک ملتوی کر دی۔

مزید : علاقائی