ٹریفک وارڈن کی توتکار بڑھ گئی ، بنیادی وجہ ۔ ۔ ۔

ٹریفک وارڈن کی توتکار بڑھ گئی ، بنیادی وجہ ۔ ۔ ۔
ٹریفک وارڈن کی توتکار بڑھ گئی ، بنیادی وجہ ۔ ۔ ۔

  


لاہور(خصوصی رپورٹ) ٹریفک وارڈن کی مختلف مکاتب فکر کے ساتھ توتکار بڑھ گئی ہے اوراس کی تازہ مثال سیکریٹری پنجاب اسمبلی کے بیٹوں کے تشدد کی صورت میں دیکھنے کو ملی ، مختلف اراکین کی طرف سے ٹریفک وراڈن کے رویہ کے خلاف پنجاب اسمبلی کے اجلاس کے دوران بھی آواز سننے کوملی لیکن باخبرذرائع نے بتایاکہ ہے کہ اس کی بنیادی وجہ وارڈن کیلئے چالانوں کی تعداد میں اضافہ ہے ۔ ذرائع نے دعویٰ کیاہے کہ ایک وارڈن کیلئے دن میں 15چالان کرنے کی ہدایت تھی لیکن اب یہ تعداد بڑھ کر دوگنایعنی 30کردی گئی ہے ۔ تیس چالان پورے کرنے کے لیے وارڈن اشارے پر کھڑے ’ملزم ‘ڈھونڈرہے ہوتے ہیں اور بیشتر اوقات بے گناہ افراد بھی شکنجے میں آجاتے ہیں ، کاغذات نہ ہونے پر تھانے کی ہوابھی کھاسکتے ہیں اور بیشتراوقات آسان ہدف موٹرسائیکل سوار اور رکشہ ڈرائیور بنتے ہیں ۔ ذرائع نے دعویٰ کیاہے کہ چالانوں کا ہدف پورا نہ ہونے پر وارڈن کو سزائیں ملتی ہیں جن میں کسی مشکل جگہ پر ڈیوٹی لگادینا، چھٹی وغیرہ بند کردینا شامل ہے ۔

مزید : لاہور