پاکستان اور یوکرائن باہمی تجارت کو 1 ارب ڈالر بڑھاسکتے ہیں:یوکرائنی سفیر

پاکستان اور یوکرائن باہمی تجارت کو 1 ارب ڈالر بڑھاسکتے ہیں:یوکرائنی سفیر

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 اسلام آباد (اے پی پی) یوکرائن کے سفیر ولادی میر لکوموف نے اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے دورہ کے موقع پر تاجر برادری سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان اور یوکرائن کی موجودہ 20 کروڑ ڈالر سے کم سالانہ باہمی تجارت صلاحیت سے بہت کم ہے جبکہ دونوں ممالک کے نجی شعبوں کے درمیان تعاون بڑھا کر سالانہ باہمی تجارت کو 1 ارب ڈالر سے زائد کیا جا سکتا ہے۔ پچھلے دو سال کے دوران پاکستان اور یوکرائن کے درمیان تجارت میں نمایاں بہتری دیکھنے میں آئی ہے تاہم اس کو بہتر کرنے کی وسیع گنجائش موجود ہے۔ انہوں نے کہا کہ یوکرائن نے یورپی یونین کے ساتھ ایک ایسوسی ایشن ایگریمنٹ پر دستخط کئے ہیں جس میں فری ٹریڈ زون کا قیام بھی شامل ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کی تاجر برادری یوکرائن کے ساتھ تجارت بڑھا کر یورپ کی 17 کھرب ڈالر کی مارکیٹ تک آسان رسائی حاصل کر سکتی ہے۔ ولادی میر لکوموف نے کہا کہ یوکرائن کی تاجر برادری پاکستان کے ساتھ تجارت بڑھانے میں گہری دلچسپی رکھتی ہے اور پاکستانی ہم منصبوں کے ساتھ مستقل پارٹنر شپ قائم کرنا چاہتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد چیمبر آف کامرس یوکرائن چیمبر آف کامرس کے ساتھ باہمی سمجھوتے کی یادداشت پر دستخط کرنے پر غور کرے تا کہ نجی شعبوں کے مابین قریبی تعاون بڑھایا جا سکے جس سے باہمی تجارت کو بہتر فروغ ملے گا۔ انہوں نے یقین دہانی کرائی کہ یوکرائن کا سفارتخانہ ایسی کوششوں میں بھرپور تعاون فراہم کرے گا تا کہ پاکستان اور یوکرائن کے درمیان تجارتی تعلقات کو مزید مستحکم کیا جا سکے۔ اس موقع پر اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر مزمل حسین صابری نے کہا کہ پاکستان اور یوکرائن کے مابین سیاسی سطح پر عمدہ تعلقات قائم ہیں لہذا ضرورت اس بات کی ہے کہ ان سے استفادہ حاصل کرتے ہوئے تجارتی و اقتصادی تعلقات کو بھی مستحکم کیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان توانائی، زراعت، ٹیکسٹائل، فوڈ پراسسنگ، اسٹیل، پھلوں، معدنیات، مشینری و ایکوپمنٹ ، ٹرانسپورٹ اور کیمیکلز سمیت متعدد شعبوں میں باہمی تعاون کی بے پناہ صلاحیت پائی جاتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک ترجیحی تجارت کا معاہدہ کرنے پر غور کریں جس سے باہمی تجارت میں واضح بہتری آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک باہمی دلچسپی کے مخصوص شعبوں میں تعاون بڑھانے کیلئے کوششیں تیز کریں جس سے بہتر تجارتی و اقتصادی تعلقات کا ایک نیا باب شروع ہو گا۔ مزمل صابری نے کہا کہ پاکستان اور یوکرائن تجارتی وفود کا تبادلہ بڑھانے کی حوصلہ افزائی کریں، ٹریڈ افیئرز اور سنگل کنٹری نمائشوں کا اہتمام کریں کیونکہ ایسی کوششیں باہمی تجارت کو بہتر کرنے میں کافی سازگار ثابت ہوں گی۔ انہوں نے کہا کہ دونوں ممالک براہ راست مواصلاتی رابطے بہتر کرنے کی کوشش کریں جس سے تجارتی و اقتصادی تعلقات کو مضبوط کرنے سہولت میسر آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد چیمبر آف کامرس یوکرائن چیمبر آف کامرس کے ساتھ ایم او یو سائن کرنے کیلئے تیار ہے اور اپنا ایک وفد یوکرائن لے جانے پر غور کرے گا تا کہ دونوں ممالک کے درمیان مشترکہ تعاون کی نئی راہیں تلاش کی جا سکیں۔ اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے سینئر نائب صدر محمد شکیل منیر اور نائب صدر محمد اشفاق حسین چٹھہ سمیت خالد اقبال ملک، خالد چوہدری، طاہر عباسی اور دیگر بھی اس موقع پر موجود تھے۔

مزید :

کامرس -