عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ میں ملت اسلامیہ کا استحکام ہے،علماء

عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ میں ملت اسلامیہ کا استحکام ہے،علماء

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 لاہور (نمائندہ خصوصی) عالمی مجلس تحفظ ختم نبوت کے زیر اہتمام قصورمیں منعقد ہونے والی عظیم الشان ختم نبوت کانفرنس کی تیاری کے سلسلے میں خطبات جمعہ کے اجتماعات سے خطاب کرتے ہوئے مولانا عزیزالرحمن ثانی،مولانا فقیراللہ اختر،قاری مشتاق احمدرحیمی،مولانا عمرحیات ،مولانا قاری علیم الدین شاکر،مولانا عبدالرزاق، مولانا عبدالنعیم نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عقیدہ ختم نبوت کے تحفظ میں ملت اسلامیہ کا استحکام ہے ،عقیدہ ختم نبوت کی بدولت دین اسلام کے تمام احکامات محفوظ ومامون ہیں۔ختم نبوت کا تحفظ کرنے والے حضوراقدس ﷺ کی ذات کے نگہبان اور چوکیدار ہیں، عقیدہ ختم نبوت کا تحفظ امت مسلمہ کی مشترکہ ذمہ داری ہے ۔ ختم نبوت کانفرنس قصورتاریخ ساز ہوگی،تمام مکاتب فکر کے جیدعلماء کرام خطاب کریں گے۔تمام مسلمان عقیدہ ختم نبوت کے ساتھ والہانہ عقیدت اور محبت رکھتے ہوئے کانفرنس میں اپنی شرکت یقینی بنائیں۔علماء کرام نے کہا عقیدہ ختم نبوت ایمان کا اہم ترین جزو ہے اس کے استحکام میں پوری امت کا استحکام ہے ۔انہوں نے کہا کہ خلافت راشدہ کے اولین دور میں تحفظ ختم نبوت کیلئے فرزندان اسلام نے جو تاریخ ساز جدوجہد کی وہ قیامت تک معیار حق و صداقت ہے ۔اور ملت اسلامیہ ان اساسی نقوش پر اپنا فرض منصبی ادا کر تی رہے گی۔ پاکستان اسلام کے نعرہ مستانہ کی بنیاد پر معرض وجود میں آیا لیکن مملکت خداداد میں منکرین ختم نبوت کو جو اہمیت دی گئی وہ ناقابل فہم ہے ۔سقوط ڈھاکہ سے آج کے حالات تک دشمنان اسلام اور منکرین ختم نبوت کی گہری سازشوں کا نتیجہ ہیں ۔ارباب اقتدار کا فرض منصبی ہے کہ اسلامی جمہوریہ کے وجود سے قادیانیت کے کینسر کو ختم کریں ۔ عقیدہ ختم نبوت کی حفاظت ہمیں اپنی جان سے بھی زیادہ عزیز ہے ۔