غیر قانونی مذبحہ بنانے، حرام یا بیمار گوشت بیچنے والوں کو 10لاکھ روپے جرمانہ، 5سال قید کی تجویز

غیر قانونی مذبحہ بنانے، حرام یا بیمار گوشت بیچنے والوں کو 10لاکھ روپے جرمانہ، ...
غیر قانونی مذبحہ بنانے، حرام یا بیمار گوشت بیچنے والوں کو 10لاکھ روپے جرمانہ، 5سال قید کی تجویز

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(ویب ڈیسک)پنجاب بھرمیں معیاری گوشت کی فراہمی کو یقینی بنانے کے لیے محکمہ لائیوسٹاک نے موجودہ سلاٹرنگ ایکٹ میں ترمیم کرکے نیا ”پنجاب کوالٹی میٹ اینڈ سلاٹرریگولیشن ایکٹ 2013“پنجاب اسمبلی کی کیبنٹ کمیٹی میں پیش کردیا ہے جس میں غیرقانونی مذبحہ بنانے، حرام، بیمار اورغیرتصدیق شدہ گوشت کاکاروبارکرنے کاجرمانہ 500روپے سے بڑھاکر 10لاکھ روپے تک اورقید کی سزا 5سال تک تجویز کی گئی ہے۔ نئے سلاٹرنگ ایکٹ کے مطابق میٹ انسپکٹرز فوری طورپرگوشت کے حوالے سے غیرقانونی دھندہ کرنے والے بے ضمیرافراد کے خلاف فوری طورپر مقدمات تیارکرکے سپیشل مجسٹریٹ درجہ اول کی عدالت میں پیش کریں گے جس سے ان بے ضمیرافراد جومردہ،حرام گوشت کاکاروبار کرنے میں ملوث ہوں گے ان کاقلع قمع کیاجاسکے گا۔ اس ایکٹ کے نافذالعمل ہونے سے پنجاب بھرمیں عوام کے لیے میعاری گوشت کی فراہمی کو یقینی بنایاجاسکے گا۔

مزید :

لاہور -