پاکستان کو دہشت گردی کی معاون ریاست قرار دینے کی بات چند ذہنوں کی سوچ ہے : اعزاز چودھری

پاکستان کو دہشت گردی کی معاون ریاست قرار دینے کی بات چند ذہنوں کی سوچ ہے : ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

واشنگٹن ( نیٹ نیوز)امریکہ میں پاکستان کے سفیر اعزاز احمد چو دھری نے کہا ہے کہ پاکستان کو دہشت گردی کی معاون ریاست قرار دیے جانے کی بات چند ذہنوں کی سوچ ہے اِس کا حقائق سے تعلق نہیں۔ بی بی سی کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے اعزاز احمد چودھری کا کہنا تھا کہ بھارت پاکستان سے مذاکرات معطل کرتا ہے تو اِس سے دہشت گردوں کی حوصلہ افزائی ہوتی ہے۔حقانی نیٹ ورک کے بارے میں اعزاز چوہدری کا کہنا تھا کہ ’وہ ہمارے دوست ہیں اور نہ ہماری پراکسی ہیں۔ اور نہ ہم چاہتے ہیں کہ وہ کسی قسم کا تشدد کریں، کسی کے خلاف بھی، امریکہ کے خلاف یا افغانستان کے خلاف۔ عام انسانوں کی زندگیوں سے کھیلنا درست نہیں ۔‘ ’پاکستان نے جس طریقے سے دہشت گردی کے خلاف جنگ کی ہے کوئی اور قوم ایسی نہیں کر سکتی کہ کس طریقے سے دہشت گردوں کے ٹھکانوں کو ختم کیا، کس طریقے سے افغان جہاد کے زمانے سے پیدا ہونے والے مسائل کو ختم کیا۔‘ ’ہمارا پیغام بہت واضح ہے، ہم بھارت کے ساتھ امن اور سلامتی کا رشتہ چاہتے ہیں حافظ سعید کی نظربندی سے متعلق سوال پر ان کا کہنا تھا کہ ’ہم نہیں سمجھتے کہ پاکستان کی سرزمین سے کوئی بھی منفی پیغام باہر جائے۔
اعزاز چودھری

مزید :

علاقائی -