خشک دریائے راوی پر جرائم کے چشمے بہنے لگے

خشک دریائے راوی پر جرائم کے چشمے بہنے لگے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور (شعیب بھٹی) دریائے راوی کی خشک سالی کے باعث ریتلے ٹیلوں پر اشتہاریوں ،اجرتی قاتلوں ،منشیات فروشوں ، ڈاکوؤں ،قبضہ گرپوں اورچوروں نے ڈیرے جمالئے ، ضلع انتظامیہ کی ملی بھگت سے غیرقانونی تعمیرات ہوئیں جہاں جرائم پیشہ افراد نے سکونت اختیا ر کر لی ہے،ضلعی انتظامیہ کارروائی کرنے کے بجائے خاموش تماشائی بنے بیٹھے ہیں جبکہ ان جرائم پیشہ عناصر کے خلاف کارروائی نہ ہونے سے صوبائی دارالحکومت میں دن بہ دن کرائم میں اضافہ ہوتا چلا جا رہا ہے۔روز نا مہ پا کستا ن کے سروے کے مطا بق دریائے راوی کی خشک سطح کو منشیات فروشوں، ڈاکوؤں اور چوروں ،ناجائز قابضین ،بھکاریوں اور افغان پناہ گزینوں نے اپنا مسکن بنا لیا ہے ۔جرم سے پہلے اس کی پلاننگ اور پھر ارتکاب کے بعد پناہ کے لئے یہی جگہ استعمال ہو رہی ہے۔ذرائع کے مطابق شہر میں ہونے والی بیشتر وارداتوں کا کھرا یہی سے ملتا ہے۔ پولیس اور سکیورٹی فورسز سب کچھ جاننے کے باوجود کارروائی کرنے سے گریزاں ہیں ۔ بھکاریوں کی بڑی تعداد نے غیر قانو نی تعمیرا ت کر رکھی ہیں۔اس کے علاوہ افغان پناہ گزینوں کی بڑی تعداد بھی یہاں آباد ہے ۔دوسری جانب در یا کے ایک بڑے حصے پر دودھ دینے والے جانوروں کے باڑے بن چکے ہیں۔ منشیات فروش اور نشئی یہاں جگہ جگہ پر دستیاب ہیں۔ تحقیقات سے یہ با ت بھی سامنے آئی ہے کہ ان ڈیرو ں پر د ہشت گردو ں سمیت اجرتی قاتل ، ڈاکو اور اشتہاری بھی چھپ کر بیٹھے ہیں۔مقامی افراد پیسون کے عوض انتہائی مطلو ب اشتہاریو ں کو پنا ہ د یتے ہیں ۔ایک مقامی شخص ادریس کا کہنا ہے کہ پنجا ب میں شروع ہو نے والے آپریشن میں پو لیس اور حساس ادارو ں نے ان علاقوں سے متعد د مشکو ک افرا د کو حرا ست میں لیا تھااس کے باوجود بہت سے جرائم پیشہ افراد بچ نکلنے میں کامیاب ہو گئے ۔ شہر میں چور ی ہو نے والی بیشتر مو ٹر سائیکلیں اور گا ڑیا ں یہاں لا ئی جا تی ہیں اور ان کے سپیر پا رٹس نکا ل کر انہیں وہیں پھیری والوں کے ہاتھوں فروخت کر دیا جاتا ہے۔ ذرائع کے مطابق ایک سیا سی گرو ہ کی سر پرستی میں چوری ر یت بھی نکا لی جا تی ہے جو لا کھو ں میں فرو خت ہو تی ہے جس پر گزشتہ پا نچ سالو ں کے دوران در جن سے زائد قتل بھی ہو چکے ہیں ۔ بتایا گیا ہے کہ قبضہ ما فیااور جرا ئم پیشہ افرا د کا غیر قانونی اسلحہ بھی یہیں دبا دیا جاتا ہے جسے واردات سے پہلے نکا لا جا تا ہے اور اکثر اوقات ناجائز اسلحہ فروخت ہوتے بھی دیکھا گیا ہے۔ در یا کی مختلف جگہوں پر ان قبضہ ما فیا نے لیٹرینیں بنا رکھی ہیں جہا ں اکثر آبروریزی کے واقعات رونما ہوتے ہیں،جرائم پیشہ افراد نے یہاں کھانے پینے کی کینٹینیں بھی بنا ر کھی ہیں،کھانے کے ساتھ ساتھ منشیات بھی فروخت کی جاتی ہے۔

مزید :

علاقائی -