سگ گزیدگی کی روک تھام کیلئے اقدامات کئے جائیں، وسیم اختر

سگ گزیدگی کی روک تھام کیلئے اقدامات کئے جائیں، وسیم اختر

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی (اسٹاف رپورٹر) میئر کراچی وسیم اختر نے آوارہ کتوں کے شہریوں کے کاٹنے کے واقعات میں اضافے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے میونسپل سروسز اور ہیلتھ ڈپارٹمنٹ کو ہدایت کی ہے کہ سگ گزیدگی کی روک تھام کے لئے فوری اقدامات کئے جائیں، خاص طور پر مضافاتی علاقوں اور کچی آبادیوں میں جہاں آوارہ کتوں کی بہتات کے باعث کتوں کے کاٹنے کے واقعات میں تشویش ناک اضافہ دیکھنے میں آیا ہے لہٰذا ایسی حکمت عملی اختیار کی جائے کہ ان علاقوں میں رہائش پذیر افراد کو تحفظ فراہم کیا جاسکے، یہ بات انہوں نے اپنے دفتر میں بلائے گئے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی جس میں مشیر مالیات خالد محمود شیخ، سینئر ڈائریکٹر میونسپل سروسز مسعود عالم، ڈائریکٹر محکمہ فوڈ اینڈ کوالٹی کنٹرول ڈاکٹر اصغر شیخ کے علاوہ سربراہ متعدی امراض ڈپارٹمنٹ انڈس اسپتال ڈاکٹر نسیم صلاح الدین، ڈائریکٹر پاکستان انیمل ویلفیئر سوسائٹی ماہرہ عمر، ڈاکٹر عصمہ گھی والا اور دیگر افراد بھی موجود تھے، میئر کراچی نے اس اخباری اطلاع کا نوٹس لیتے ہوئے جس کے مطابق جناح اسپتال میں ایک ہی دن میں کتوں کے کاٹنے کے 13 کیسز لائے گئے کہا کہ کتا مار مہم کے حوالے سے اٹھائے جانے والے اعتراضات کا جائزہ لیا جائے اور ایسے دیگرآزمودہ طریقے استعمال کئے جائیں جن کے ذریعے آوارہ کتوں کو کنٹرول کیا جاسکے، انہوں نے کہا کہ اب تک اس حوالے سے کوئی باقاعدہ پالیسی مرتب نہیں کی گئی ہے جس کی وجہ سے پورے ملک میں کہیں بھی اس سلسلے میں باقاعدہ مہم نہیں چلائی جاتی اور نہ ہی آوارہ کتوں کے خاتمے کے لئے کوئی ٹائم فریم مقرر کیا گیا ہے تاہم انہوں نے ہدایت کی کہ اس سلسلے میں متعدی امراض کے ماہرین ، حیوانات کی فلاح کے لئے کام کرنے والے اداروں اور انڈس اسپتال میں اس شعبے کے ماہرین کی تجاویز اور سفارشات سے استفادہ کیا جاسکتا ہے جس پر پہلے ہی کام جاری ہے اور اس حوالے سے انڈس اسپتال میں بلدیہ عظمیٰ کراچی کے افسران اور انڈس اسپتال کے ڈاکٹروں کا ایک اجلاس بھی ہوچکا ہے جس میں آوارہ کتوں کی تعداد میں کمی لانے اور سگ گزیدگی کے واقعات کو کنٹرول کرنے کے لئے اقدامات پر غور کیا گیا ، میئر کراچی نے کہا کہ سگ گزیدگی نہایت خطرناک ثابت ہوسکتی ہے اگر مریض کو بروقت علاج فراہم نہ کیا جائے لہٰذا اس اہم ترین مسئلے کے حوالے سے عوام الناس میں وسیع تر آگاہی فراہم کرنا ضروری ہے اور ساتھ ہی ایسے اقدامات بھی کرنے ہوں گے جن کے ذریعے اس مرض کا خاتمہ عمل میں لایا جائے، انہوں نے کہا کہ بیماریوں سے بچاؤ کا بہترین طریقہ صاف ستھرے ماحول کی فراہمی ہے جس کے لئے تمام شہریوں کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا، ہمارے گلی، محلے ، بازار اور سڑکیں گندگی اور تجاوزات سے پاک ہوں گے تو جہاں دیگر مسائل سے نجات ملے گی وہیں آوارہ کتوں کی تعداد میں بھی نمایاں کمی دیکھنے میں آئے گی۔