عطائیوں کیخلاف کریک ڈاؤن جاری ، 8200اڈے بند ، 6کروڑ سے زائد جرمانے

عطائیوں کیخلاف کریک ڈاؤن جاری ، 8200اڈے بند ، 6کروڑ سے زائد جرمانے

  

 لاہور(جنرل رپورٹر) پنجاب ہیلتھ کےئر کمیشن کاعطائیوں پر کریک ڈاؤن ،اب تک صوبہ بھرسے 8200عطائیوں سے زائد کے کاروباربند کرکے انھیں63.12ملین روپے کے جرمانے عائد کردیے گئے ہیں ۔دوسری جانب 41ہزار سے زائد مستند علاج گاہوں کو رجسٹر یشن اور لائسنس جاری کیے گئے ہیں اوران میں سے 12ہزار سے زیادہ علاج گاہوں کے 16ہزار سے زائد معالجین کو صحت کی خدمات کے کم سے کم معیارات میں تربیت دی گئی ہے۔ کمیشن نے اپنے ایکٹ 2010ء کی تعمیل میں 27ہزار سے زیادہ علاج گاہوں کو لائسنس جاری کیے ہیں اورصحت کی معیاری خدمات کی فراہمی کو یقینی بناتے ہوئے کمیشن نے 10ہزار سے زیادہ سرکاری و نجی علاج گاہوں کا معائنہ کیا تاکہ صحت کی خدمات فراہم کرنے والوں کی استعدادکار میں اضافہ اور کم سے کم معیارات پر موثر عمل در آمد کو یقینی بنایا جاسکے۔ کمیشن نے اب تک 12مختلف اقسام کی بڑی وچھوٹی علاجگاہوں کے کم سے کم معیارات تیار کرلیے ہیں اور مزید تین کے تکمیل کے آخری مراحل میں ہیں۔ مزید برآں 12ہزار سے زائد علاج گاہوں کے تقریبا 16ہزارمعالجین اورمنتظمین کی 400ورکشاپس کے ذریعے تربیت کی گئی اور تربیت پانے والوں کو کم سے کم معیار ات کو قائم کرنے اور اس پر عمل در آمد کے لیے منصوبہ بندی کرنے کے لیے مکمل رہنمائی کی گئی۔ ان تربیتی پروگراموں میں علاج گاہوں میں صحت کی خدمات کے مختلف انتظامات اور انتظامیہ کی ذمہ داریاں، سہولتوں کی دستیابی، محفوظ اور معیاری علاج کو یقینی بنانا ، مریضوں کی مناسب دیکھ بھال اور حقوق کا خیال رکھنا اور علاج گاہ میں انفیکشن کنٹرول کا موثر نظام رائج کرنا شامل ہے۔اس کے علاوہ 225سروےئرزکی بھی تربیت کی گئی۔کمیشن کو 1,300سے زائد شکایات بھی موصول ہوئی ہیں جن میں سے صرف 179کی تحقیقات جاری ہیں جبکہ باقی ماندہ پر فیصلہ سنایا جاچکاہے۔ کمیشن کے ترجمان نے بتایاکہ کمیشن کی کامیابیوں کے پیش نظر دیگر صوبوں اوروفاق میں پنجاب ہیلتھ کےئر کمیشن کے ایکٹ اور ماڈل کو اپنایا جا رہا ہے اوراس سلسلے میں کمیشن کے صوبوں کے ساتھ مشاورتی اجلاس ہوئے ہیں اور ان سے مکمل تعاون کیا جا رہا ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -