مقبوضہ کشمیر ، بھارتی فورسز کی جارحیت کیخلاف مظاہرے ، شیلنگ سے متعدد کشمیری زخمی

مقبوضہ کشمیر ، بھارتی فورسز کی جارحیت کیخلاف مظاہرے ، شیلنگ سے متعدد کشمیری ...

  

سرینگر (این این آئی) مقبوضہ کشمیرکے بارہمولہ اور پلوامہ کے اضلاع میں بھارتی فوجیوں کی طر ف سے تلاشی اور محاصرے کی کارروائیوں کے دوران جھڑپوں میں متعدد نوجوان زخمی ہوگئے۔ کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق ضلع بارہمولہ کے سوپور قصبے کے گاؤں بریتھ میں بھارتی فوج،اسپیشل آپریشنز گروپ اور سینٹرل ریزرو پولیس فورس کی طرف سے تلاشی اور محاصرے کی مشترکہ کارروائی کے خلاف علاقے میں زبردست مظاہرے کئے گئے اور اس موقع پر مظاہرین اور بھارتی فورسز کے اہلکاروں کے درمیان جھڑپیں بھی ہوئیں۔ اس دوران بھارتی فورسز نے خورشید احمد میر اور معراج احمد سمیت دو مقامی نوجوانوں کو حراست میں لے لیا۔ دو نوں نوجوانوں کی گرفتاری کے خلاف بڑی تعداد میں لوگوں نے سڑکوں پر نکل کر بھارتی فورسز پر پتھراؤ کیا جنہیں منتشر کرنے کیلئے بھارتی فورسز نے آنسو گیس اور پیلٹ گن سمیت طاقت کا وحشیانہ استعمال کیاجس سے متعدد افراد زخمی ہو گئے۔ زخمی نوجوانوں کو ہسپتال منتقل کردیاگیا۔ادھر ضلع پلوامہ کے گاؤں ٹہاب کے رہائشیوں نے گزشتہ شب بھارتی فوجیوں کی طرف سے مقامی افراد پر ظلم و تشدد اورانکی املاک کو نظر آتش کرنے کے خلاف مظاہرہ کیا۔ مظاہرین نے پلوامہ ٹاؤن کی طرف جانیوالی سڑک بند کر دی ۔ ان کاکہنا تھا فوجیوں نے گھروں میں گھس کر لوگوں کو تشدد کا نشانہ بنایا جس سے متعدد افراد زخمی ہو گئے ہیں ۔ بھارتی فورسز نے ضلع راجوری کے علاقے سندر بانی میں کنٹرول لائن کے قریبی متعدد دیہات میں بھی تلاشی اور محاصرے کی بڑی کارروائی شروع کی ہے ۔پولیس نے ضلع بانڈی پورہ کے علاقے حاجن میں تلاشی اور محاصر ے کی کارروائی کے دوران عرفان احمد بٹ نامی ایک نوجوان کو گرفتار کرلیا ہے ۔دریں اثناء ضعل شوپیاں کے علاقے کچھ ڈورہ میں بعض نامعلوم مسلح افراد نے ایک فوجی گاڑی پر حملہ کیا تاہم کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔

مقبوضہ کشمیر

مزید :

علاقائی -