اجرت کیوں مانگی، کنجوانی، بااثر ملزموں کا محنت کش خاتنون، معذور ساس پر گھر سے بازار میں لاکر وحشیانہ تشدد

اجرت کیوں مانگی، کنجوانی، بااثر ملزموں کا محنت کش خاتنون، معذور ساس پر گھر ...

  

کنجوانی (نمائندہ خصوصی )کام کی اجرت مانگنے پر بااثر ملزموں نے محنت کش خاتون کے گھر دھاوابول دیااوراسے بالوں سے کھنچ کرسر با ز ا رلا کر لاتوں اور سوٹوں کی بارش کر دی ،بہو پر تشدد ہوتے دیکھ کر دونوں ٹانگوں سے معذور ساٹھ سالہ معمر خاتون کے شور مچانے پر بھی درندے باز نہ آئے الٹا اسے بھی نہ بخشا ،منہ اور ہاتھ اس کی ہی چادر سے باندھ دیئے اور تشدد کا نشانہ بنایا ، اہل علاقہ نے مداخلت کرکے دونوں خوا تین کی جان بچائی، مسلح ملزم ہوائی فائرنگ کرتے ہوئے نکل گئے ،جبکہ پولیس نے بااثر ملزموں کا ساتھ دیا اورملزموں کے بجائے متاثرہ خا تو ن کے بیٹے کو گرفتار کرکے لے گئی، جسے بعد ازاں اے ایس آئی قائم دین پولیس تھانہ گڑھ نے 5000ہزار روپے نذرانہ لیکر چھوڑا ، متا ثر ہ خواتین نے ارباب اختیارسے نوٹس لیکر انصاف فراہم کرنے کی دہائی دی ہے ۔ تفصیلات کے مطابق تھانہ گڑھ کے گاؤں حاکم کوٹ کے ر ہا ئشی نعیم ولد جعفر علی ماچھی کی بیوی تسلیم اور والدہ نے اپنے اوپر ڈھائے جانیوالے مظالم کی داستان سناتے ہوئے کہا وہ میرابیٹا وسیم،شوہر نعیم اور مرسلین کیساتھ کماد کی چھلائی کا کام کرتے تھے جب اجرت لینے کیلئے میرا بیٹا وسیم گیا تو ملزمان برکت سرفراز امین قدرت علی شامند علی نصر ت اور ناصر وغیرہ آگ بگولہ ہو گئے اور طیش میں آ کروسیم کو تشدد کا نشانہ بنایا حصول انصاف کیلئے درخواست تھانہ گڑھ دی تو ملزمان نے انا کا معاملا بناتے ہوئے میرے گھر پر دھاؤا بول دیا ، مجھے شدید تشدد کا نشانہ بناتے ہوئے بالوں سے کھنچ کر سربازار لاتوں اور مکوں اور سوٹوں کا کی بارش کر دی ،میری چیخ وپکار سن کر دونوں ٹانگوں سے معذورمیری ساس نے واویلا مچایا تو ملزموں نے دوپٹے کیساتھ ان کے ہاتھ اورمنہ باندھ کر تشددکیا، اہل گاؤں نے آ کر جان بچائی ،پولیس تھانہ گڑھ کے عدم تعاون کی وجہ سے انہوں نے احتجاج کرتے ہوئے مطالبہ کیا ا ر با ب اختیار نوٹس لے کرفوری انصاف فراہم کریں ۔

مزید :

صفحہ آخر -