نیب نے گوجرانوالہ اریگیشن کوآپریٹیو ہاؤسنگ سوسائٹی متاثرین کو چیک دیدیا

نیب نے گوجرانوالہ اریگیشن کوآپریٹیو ہاؤسنگ سوسائٹی متاثرین کو چیک دیدیا

لاہور(خبر نگار) نیب لاہور نے گوجرانوالہ اریگیشن کوآپریٹیو ہاؤسنگ سوسائٹی کیس میں ملزموں سے وصول ہونے والے 73لاکھ 60ہزار روپے کی رقم کا چیک ہاؤسنگ سوسائٹی کے موجودہ صدر چوہدری محمد ریاض کے حوالے کردیا گیا۔نیب کے ذرائع کے مطابق سابق انتظامیہ گوجرانوالہ اریگیشن کوآپریٹیو ہاؤسنگ سوسائٹی جن میں مرکزی ملزم محمد یعقوب لونا اور شریک ملزموں غلام علی،ذکاء اللہ بھٹی، طارق اشرف خان، چوہدری فخر الزماں و دیگر شامل ہیں نے آپس کی ملی بھگت سے سوسائٹی کیلئے زمین کی غیر قانونی خرید و فروخت اور پلاٹوں کی الاٹمنٹ کی مد میں دھوکہ دہی کے ذریعے عوام سے 6کروڑ روپے کا غبن کیا۔ملزموں نے ہاؤسنگ سوسائٹی کو گوجرانوالہ ڈویلپمنٹ اتھارٹی(جی ڈی اے) سے این او سی حاصل کئے بغیر اور جی ڈی اے کی جانب سے ہاؤسنگ سوسائٹی کو غیر قانونی قرار دیئے جانے کے باوجود1300کنال اراضی لگ بھگ3ہزار متاثرین کو الاٹ کی جبکہ ریونیو ریکارڈ کے مطابق انتظامیہ کے پاس محض200کنال اراضی موجود تھی چنانچہ ملزمان اپنے اس غیر قانونی اقدام سے تقریبا6کروڑ روپے غبن کرنے کے مرتکب ٹھہرے۔ نیب کے ذرائع کے مطابق ملزموں کے خلاف دھوکہ دہی کی مد میں شکایات موصول ہونے پر نیب لاہور نے تفتیش کا آغاز کیا جس میں ملزموں کی اپنے فرنٹ مین کی مدد سے مہنگے داموں اراضی کی خرید کے علاوہ ایک ہی رقبہ کو متعدد مرتبہ مختلف خریداروں کو فروخت کرنیکے بھی ثبوت حاصل ہوئے۔ گوجرانوالہ اریگیشن کوآپریٹیو ہاؤسنگ سوسائٹی کی سابق انتظامیہ کے دھوکہ دہی و بدعنوانی میں ملوث ہونے کے ٹھوس شواہد حاصل ہونے پر تمام ملزمان کی نہ صرف گرفتاری عمل میں لائی گئی بلکہ ملزموں کے خلاف بعدازاں تفتیش کو مکمل کرتے ہوئے2015میں احتساب عدالت میں کرپشن ریفرنس بھی داخل کر دیا گیا۔ نیب کے ترجمان کے مطابق ملزموں سے پلی بارگین قانون کے تحت برآمد کی گئی 1کروڑ11لاکھ41ہزار روپے رقم کی پہلی قسط متاثرین کو لوٹائی جا چکی ہے جبکہ وصول شدہ دوسری قسط73لاکھ60ہزار روپے کا چیک آج مذکورہ ہاؤسنگ سوسائٹی کے موجودہ صدر کے حوالے کیا گیا تاکہ لوٹی گئی رقوم کو متاثرین میں تقسیم کیا جاسکے۔

نیب چیک

مزید : صفحہ آخر