پاکستان اور ایران مشترکہ مذہب وثقافت کے مالک ہیں، راجہ ظفرالحق

پاکستان اور ایران مشترکہ مذہب وثقافت کے مالک ہیں، راجہ ظفرالحق

  

اسلام آباد(آئی این پی ) سینٹ میں قائد ایوان سینیٹر راجہ محمد ظفرالحق نے پاکستان کے دورے پر آئے ایران کے سابق وزیر برائے خارجہ امور ڈاکٹر کمال خارازی کی قیادت میں چھ رکنی وفدسے منگل کو پارلیمنٹ ہاؤس میں ملاقات کی ۔ ملاقات میں باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کرتے ہوئے ایران کی طرف سے پاکستان کی ہر مشکل گھڑی میں ساتھ دینے اور دہشت گردی کے خلاف جنگ میں قربانیوں کو سراہنے پرایران کے سابق وزیر کا شکریہ ادا کیا ۔قائد ایوان سینیٹ نے کہا کہ دونوں ممالک مشترکہ بارڈر ، مذہب ، ثقافت اور تہذیب وتمدن کے مالک ہیں اور ہمیشہ ایک دوسرے کی مدد میں آگے رہے ہیں ۔انہوں نے کہا کہ پارلیمانی وفود کے تبادلوں سے دونوں ممالک کے رہنماؤں کو اکھٹے ملکر درپیش مسائل اور چیلنجز کو حل کرنے کا موقع ملتا ہے ۔ڈاکٹر کمال خارازی نے قائد ایوان کے خیالات سے اتفاق کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان اور ایران دو برادر ہمسایہ ممالک ہیں اور دونوں ممالک کے دشمن مشترکہ ہیں جو پاکستان اور ایران کے تعلقات میں رکاوٹیں پیدا کرتے ہیں تاکہ ایک دوسرے کے تجربات ، شعبہ جات اور وسائل سے فائدہ نہ اٹھا سکیں ۔انہوں نے کہا کہ پر امن افغانستان دونوں ممالک کے لیے اہمیت کا حامل ہے اور دونوں ممالک نے ہمیشہ افغانستان کی ہر مشکل گھڑی میں مدد کی ہے ۔ راجہ محمد ظفرالحق نے کہا کہ پاکستان اور ایران نے افغانستان کے مسائل حل کرنے کی ہمیشہ ذمہ داری قبول کی ہے جس کی دونوں ممالک نے بھاری قیمت بھی ادا کی ہے ۔ملاقاتمیں ایران کے سفیر مہدی ہنر دوست ، اکیڈمک کلچرل کمیشن کے سربراہ مصطفویٰ ، کونسل کے سیکرٹری خرم شاد، فراجی راداور طاہری کے علاوہ سینیٹر مشاہد اللہ خان ، چوہدری تنویر خان ، محمد جاوید عباسی اور محمد اسد خان جونیجو بھی موجو دتھے ۔

مزید :

صفحہ آخر -