الیکشن سے قبل ایک صوبے کیخلاف نیب کی انتقامی کاروائیوں کو نظر انداز نہیں کیا جاسکتا ، احسن اقبال

الیکشن سے قبل ایک صوبے کیخلاف نیب کی انتقامی کاروائیوں کو نظر انداز نہیں کیا ...

اسلام آباد (آن لائن) وفاقی وزیرداخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ عین الیکشن سے قبل نمایاں کارکردگی دکھانے والے صوبے کیخلاف نیب کی انتقامی کارروائیوں کے سیاسی اثر کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا ، نیب ساڑھے چار سال پہلے سویا ہوا تھا ، نواز شریف گرفتاری سے نہیں ڈرتے اگر انتہائی قدم اٹھایا گیا توبیانیے کو مزید تقویت ملے گی ۔ گزشتہ روز نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر احسن اقبال نے کہا ہے کہ پاکستان کے خلاف اندرونی اور بیرونی طور پر سازشیں ہو رہی ہیں ملک دشمن عناصر انتشار پھیلا کر پاکستان اور سی پیک کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں، پاکستانی سٹیک ہولڈرز کا فرض بنتا ہے ملکر پاکستان کے خلاف ہونے والی سازشیوں کو ناکام بنائیں ۔ پاکستان آئندہ الیکشن کی طرف جا رہا ہے ایسے فیصلے نہیں کرنے چاہئیں جس سے کسی بھی پارٹی کو ٹارکٹ کریں ۔ پنجاب حکومت کی کارکردگی دیکھ کر یہ تمام صوبوں سے نما یاں ہے ، ایک صوبہ اچھے کام کر رہا ہے اس کے خلاف اچانک کارروائیاں دباؤ میں لانے کے مترادف ہے۔ عین الیکشن سے قبل انتقامی کارروائیوں کے سیاسی اثر کو نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔ سیاسی اثرات سے انکار نہیں کیا جا سکتا نیب چار سال پہلے سویا ہوا تھا۔دوسری طرف اسلام آباد میں امن و سلامتی اور پائیدار ترقی کے حوالے سے منعقدہ کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال نے کہا ہے کہ داخلی سلامتی اور امن ہی پائیدار ترقی کی ضمانت ہے کیونکہ جب تک ملک میں امن نہ ہو تب تک پائیدار ترقی کا حصول خواب ہی ہوسکتا ہے امن کے بغیر ترقی نہیں ہوسکتی امن و ترقی ایک ہی سکے کے دو رخ ہیں انہوں نے کہا کہ لوگوں کی زندگیوں کو بہتر بنانے کیلئے معاشرے کو پرامن بنانا ہوگا جس کیلئے ہمیں اپنے اندر اتحاد پیدا کرنے کی ضرورت ہے وفاقی وزیر داخلہ نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مزید کہا کہ دنیا کو پرامن بنانے کیلئے مشترکہ لائحہ عمل اپنانا ہوگا کیونکہ باہمی تعاون کے نظریے پر عمل کرنیوالے ممالک ہی کامیابی کی جانب گامزن ہیں اگر ہم نے ترقی کرنی ہے تو خطے میں باہمی تعاون کے نظریے پر عمل کرنا ہوگا ۔

مزید : صفحہ اول