سروسز ہسپتال ، بہن کے علاج کی دہائی دینے والا کانسٹیبل ینگ ڈاکٹرز کے ہاتھوں قتل

سروسز ہسپتال ، بہن کے علاج کی دہائی دینے والا کانسٹیبل ینگ ڈاکٹرز کے ہاتھوں ...

لاہور(کرائم رپورٹر)سروسز ہسپتا ل میں ینگ ڈاکٹرز اور عملے نے سفاکیت کی انتہا کر دی بہن کے علاج کی دہائی دینے والے موٹروے پولیس کے کانسٹیل کو تشدد کر کے موت کے گھاٹ اتار دیا، مقتول 4بچوں کا باپ تھا، وزیراعلیٰ پنجاب نے واقعے کا نوٹس لے کر سی سی پی او لاہور اور وزیرصحت سے رپورٹ طلب کر لی ، مقتول کے لواحقین کے احتجاج پر، پولیس نے قتل کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیا ہے تاہم کوئی گرفتاری عمل میں نہ آسکی ، ۔تفصیلات کے مطابق پٹرولنگ پولیس کانسٹیبل سنیل سلیم اپنی بہن کرن کو سروسز ہسپتال ڈلیوری کے لیے لایاجہاں اسکی بہن کی حالت خراب ہو گئی اس دوران لیڈی ڈاکٹروں کی جانب سے مریضہ کو چیک نہ کیے جا نے پر سنیل نے موقع پر موجود لیڈی ڈاکٹرسائرہ کو اسکی بہن کو چیک اپ کرنے کا کہا تو لیڈی ڈاکٹر چیک کرنے کی بجائے سنیل سلیم اور اس کے گھر والوں کو کہنا شروع کردیا کہ بہت جلدی ہے تو پرائیویٹ ہسپتال لے کر جاؤ تکرار بڑھنے پر ڈاکٹر سائرہ نے سنیل سلیم کو تھپڑ مار دیا ا س دوران سکیورٹی گارڈز، وارڈ بوائے اور دیگر ڈاکٹر اکٹھے ہوگئے سب نے مل کر سنیل سلیم کو یہ کہہ کر مارنا شروع کر دیا کہ اس نے ڈاکٹر سائرہ سے اونچی آواز میں بات کی ہے تشدد کے نتیجے میں سنیل بے ہوش ہو کر زمین پر گر گیاجبکہ ڈاکٹرز ار دیگر عملہ موقع سے غائب ہو گئے سنیل کو بے ہوشی کی حالت میں طبی امداد کے لیے آئی سی یو میں منتقل کیا گیا جہاں وہ چند گھنٹے زندگی اور موت کی کشمکش میں مبتلا رہنے کے بعد دم توڑ گیا سنیل کی موت کی اطلاع ملنے پر اسکے لواحقین بڑی تعداد میں ہسپتال پہنچ گئے اور احتجا ج شروع کر دیا اس موقع پر پولیس کی بھاری نفری بھی موقع پر پہنچ گئی جنہوں نے مشتعل مظاہرین کوانصاف کی یفین دہانی کروائی جس پر مقتول کے لواحقین پرامن طور پر منتشر ہو گئے بعد ازاں پولیس نے سنیل کی لاش قبضے میں لے کر پورسٹمارٹم کے بعد ورثا کے حوالے کر دی اور اس کے بھائی انیل کی درخواست پر لیڈی ڈاکٹر سمیت 14ڈاکٹروں اور20گارڈز اور 10وارڈ بوائز کے خلاف قتل کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کر لیا مقتول سنیل 4بچوں کا باپ تھا، دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب نے سروسز ہسپتال میں گزشتہ رات پیش آنے والے اس افسوسناک واقعے کا نوٹس لیتے ہوئے صوبائی وزیر صحت اور سیکرٹری صحت سے رپورٹ طلب کرلی۔

قتل

ایم ایس نے عملے کے بچاؤ کے لیے حکمت عملی اپناتے ہوئے درخواست دائر کر دی

لاہور(کرائم رپورٹر)ہسپتال کے ایم ایس نے بھی اپنے عملے کے بچاؤ کے لیے حکمت عملی اپناتے ہوئے درخواست دائر کر دی جس میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ لواحقین اور انتظامیہ کے درمیان ہاتھا پائی میں لواحقین بے دردی سے مار پیٹ کررہے ہیں ۔

ایم ایس

سینئر ڈاکٹروں نے لاش وینٹی لیٹر پر لگا کر تمام ڈاکٹرز،گارڈز و وارڈ بوائز کو فرار کا موقع دیا، لواحقین

لاہور(کرائم رپورٹر) لواحقین نے الزام عائد لیا ہے سنیل سلیم ڈاکٹروں اور عملے کے تشدد سے موقع پر ہی جاں بحق ہوگیا تھا لیکن کچھ سینئر ڈاکٹروں نے اس کی لاش وینٹیلیٹر پر لگا کر تمام ڈاکٹروں وارڈ بوائز اور سکیورٹی گارڈز کو فرار ہونے کا موقع دیا جس کے بعد رات3بجے ہمیں بتایا گیا کہ سنیل جاں بحق ہوگیا ہے۔

مزید : صفحہ اول