شاہد خاقان عباسی منتخب وزیراعظم نہیں، چیئرمین سینیٹ کے دوبارہ انتخاب کا مطالبہ غیر آئینی: ظفر اللہ جمالی

شاہد خاقان عباسی منتخب وزیراعظم نہیں، چیئرمین سینیٹ کے دوبارہ انتخاب کا ...

  

تمبو(آن لائن)سابق وزیراعظم ورکن قومی اسمبلی الحاج میر ظفراللہ خان جمالی نے کہا ہے شاہد خاقان عباسی منتخب وزیراعظم نہیں بلکہ بنائے گئے ہیں ،وزیراعظم کی جانب سے سینٹ چیئرمین کے دوبارہ انتخاب کرانے کا مطالبہ غیر آئینی ہے، ویسے بھی سینٹ چیئرمین کا تعلق چھو ٹے صوبے بلوچستان سے ہے اسلئے بہت سے لوگوں کو تکلیف ہو رہی ہے، وزیراعظم نے حلف اٹھایا ہے اسلئے انہیں ایسی بات نہیں کرنی چا ہیے ،سندھ اور بلوچستان کو  ہمیشہ اقتدار سے باہر رکھا گیا، میری مسلم لیگ سے خاندانی وابستگی رہی ہے لیکن اب نہیں ،اب مسلم لیگ کو مختلف نا موں سے منسوب کر کے اصلی مسلم لیگ کا بیڑہ غرق کردیا گیا ہے، متحدہ مسلم لیگ بلوچستان کا قیام لایا گیا تو (ن) لیگ کے تابوت میں آ خر ی کیل ثابت ہوگی ،نواز شریف کے پچھلے اور موجود سیاسی حالات کا جائزہ لیا جاے تو نواز شریف کے مستقبل کا نتیجہ خود نکل آئے گا،گزشتہ روز ڈیرہ مراد جمالی میں میڈیا سے گفتگو میں سابق وزیر اعظم کا مزید کہنا تھا ملک کی خدمت کیلئے نگراں وزیراعظم بنایا گیا تو خوشی کی بات ہوگی لیکن ایسا دکھائی نہیں دیتا، میں پاکستانی ہوں پاکستان ہے تو ہم ہیں امید پر دنیا قائم ہے لیکن موجودہ ملکی حالات کے پیش نظر 2018 کے عا م انتخابات دور تک نظر نہیں آتے،مسلم لیگ ہماری بنیادی فیملی پارٹی رہی ہے مگر مسلم لیگ کو سب نے اپنی ذاتی پارٹی بناکر اس آگے ایک لفظ لگاکر اپنی جاگیر بنادیا ہے، میں نے پہلا الیکشن پیپلزپارٹی کے ٹکٹ پر لڑا، میرے والد نے میرا ہاتھ بھٹو صاحب کے ہاتھ میں دیا تھا اور پی پی پی کیساتھ بھی ہمارا تعلق رہا ہے،ہم نے نصیرآباد اور جعفرآباد کے عوام کی بھلائی کیلئے ہمیشہ کام کیا اور کرتے رہیں گے ۔امید ہے 2018ء کے عام الیکشن میں نصیرآباد اورجعفرآباد کے عوام اچھے امیدوار سامنے لائیں گے۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -