بہادرآباد گروپ کو سنجرانی کو ووٹ دینے کاصلہ دیاگیا،فاروق ستار

بہادرآباد گروپ کو سنجرانی کو ووٹ دینے کاصلہ دیاگیا،فاروق ستار
بہادرآباد گروپ کو سنجرانی کو ووٹ دینے کاصلہ دیاگیا،فاروق ستار

  

کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) متحدہ قومی موومنٹ پی آئی بی کے سربراہ فاروق ستار نے کہا ہے کہ بہادرآباد گروپ کو سنجرانی کو ووٹ دینے کاصلہ دیاگیا ہے،وقت آنے پربتاو¿ں گا فیصلے کے پیچھے کون ہے۔

نجی ٹی وی سماءسے انٹرویو میں گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق ستارکا کہنا تھا کہ عوام نے الیکشن کمیشن کے فیصلے کو رد کر دیا ہے، وہ نہیں چاہتے لیکن عوام عدالت میں جانا چا ہتے ہیں ،الیکشن کمیشن کے اختیارات کا دائرہ عدالت طے کرے گی، بہادرآباد گروپ کو سنجرانی کو ووٹ دینے کاصلہ دیاگیا،وقت آنے پربتاو¿ں گا فیصلے کے پیچھے کون ہے۔

انہوں نے کہا کہ ان کے پاس ابھی تمام ختیارات موجود ہیںاور ان کی طرف سے نئے انٹرا پارٹی الیکشن کی تجویز دی گئی ۔ ان کا کہنا تھا کہ خواجہ اظہاربھی جانتے ہیں فیصلے کے پیچھے کون ہے،پیپلزپارٹی،پی ایس پی،پی ٹی آئی کوموقع دیاجارہاہے، مائنس ٹوکرکے متحدہ کاووٹ بینک تقسیم کیاجارہاہے ، فیصل سبزواری22اگست معاملے پربات نہیں کرسکتے کیونکہ وہ 22 اگست کوملک میں موجودہی نہیں تھے۔

فاروق ستار نے کہا کہ سیاسی اور عدالتی سطح پر فیصلہ چیلنج کریں گے، میں نے نہیں کہا کہ مجھے کیوں نکالا،35 سالہ سیاسی جدوجہد کارکنوں کے سامنے ہے،6 اپریل کوباغ جناح میں جلسہ کرنے پرغورکررہے ہیں، میڈیا کی بجائے براہِ راست رابطے کیے جائیں، میرے پاس اب بھی آخری کارڈ ہے۔

فاروق ستار نے مزید کہا کہ وہ بہادرآبادگروپ کومل کر بیٹھنے کی دعوت دیتے ہیں۔انہوں نے اس بات کا بھی دعویٰ کیا کہ انہیںپی ٹی آئی اورپیپلزپارٹی کی جانب سے شمولیت کی دعوت ملی ہے۔انہوں نے کہا کہ وہ کسی اورجماعت میں نہیں جائیں گے ، 45 دنوں کی دوری پر30سالوں کی رفاقت حاوی ہوگی۔

مزید :

سیاست -علاقائی -سندھ -کراچی -