کرونا وائرس کیخلاف لڑائی کی عالمی کوششوں کو ۔۔۔چین نے دنیا کو بڑی پیشکش کر دی

کرونا وائرس کیخلاف لڑائی کی عالمی کوششوں کو ۔۔۔چین نے دنیا کو بڑی پیشکش کر دی
کرونا وائرس کیخلاف لڑائی کی عالمی کوششوں کو ۔۔۔چین نے دنیا کو بڑی پیشکش کر دی

  

بیجنگ(ڈیلی پاکستان آن لائن)چین کے سٹیٹ کونسلر اور وزیر خارجہ وانگ یی نے کہا ہے کہ چین روس اور اقوام متحدہ سلامتی کونسل کے دیگر مستقل ممبروں کے ساتھ کرونا وائرس کے پھیلاؤ سے نمٹنے کے لئے مشترکہ عالمی کوششوں کو فروغ دینے کے لئے رابطوں کا عمل مستحکم کرنے کے لئے تیار ہے۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق اپنے روسی ہم منصب سرگئی لاوروف سے فون پر گفتگو کے دوران وانگ نے کہا کہ چینی صدر شی جن پنگ اور روسی صدر ولادی میر پوتن نے گذشتہ روز  کرونا وائرس سے متلعق ویڈیو لنک کے ذریعے ہونے والے جی 20 رہنماؤں کے غیر معمولی اجلاس میں اہم تقریریں کیں اور وبائی امراض کی روک تھام اور کنٹرول کے لئے بین الاقوامی تعاون سے متعلق بڑے اقدامات کا سلسلہ جاری رکھنے پر زور دیا۔وانگ نے کہا کہ دونوں ممالک کی مشترکہ پوزیشن نے دنیا کو ایک مضبوط اور مثبت سگنل بھیجا ہے اور اس سربراہی کانفرنس کو مکمل کامیابی کے لئے مدد دی ہے۔یہ باور کراتے ہوئے کہ وبائی کرونا وائرس پوری دنیا میں تیزی سے پھیل رہا ہے اور عالمی برداری کو مشترکہ چیلنج کا سامنا ہے۔ وانگ نے کہا کہ چین اس وبائی بیماری کیخلاف لڑائی میں بین الاقوامی تعاون کو مستحکم کرنے کیلئے تمام سازگار اقدامات کا خیر مقدم کریگا۔چین روس اور اقوام متحدہ سلامتی کونسل کے دیگر مستقل ممبروں کے ساتھ کرونا وائرس کے پھیلا سے نمٹنے کے لئے مشترکہ عالمی کوششوں کو فروغ دینے کے لئے رابطے اور تعاون مستحکم کرنے کے لئے تیار ہے۔اپنی گفتگو کے دوران لاروف نے کرونا وائرس کیخلاف لڑائی میں چین کی مرحلہ وار فتح کی تعریف کی اور کرونا وائرس کیخلاف لڑائی میں روس چین تعاون پر مثبت بات کی۔انہوں نے کہا کہ روس فعال طور پر چین کے تجربے سے سبق لے رہا ہے اور اپنی صورتحال کے مطابق روک تھام کے لئے کوششیں کر رہا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -