ملکی و غیر ملکی پروازیں معطل، سرحدیں بھی بند کردی گئیں ،غیر ملکی پروازوں اور ائیر ٹریفک کو کب تک بند رکھا جائے گا ؟حکومت نے واضح اعلان کر دیا

ملکی و غیر ملکی پروازیں معطل، سرحدیں بھی بند کردی گئیں ،غیر ملکی پروازوں اور ...
ملکی و غیر ملکی پروازیں معطل، سرحدیں بھی بند کردی گئیں ،غیر ملکی پروازوں اور ائیر ٹریفک کو کب تک بند رکھا جائے گا ؟حکومت نے واضح اعلان کر دیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)قومی رابطہ کمیٹی نے کورونا وائرس کی روک تھام کے لیے 4 اپریل تک اندرون وبیرون ملک ایئر ٹریفک معطل اور دوہفتوں تک مشرقی و مغربی سرحدیں بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اسلام آباد میں صحافیوں کو قومی رابطہ کمیٹی کے فیصلوں سے آگاہ کرتے ہوئے وزیر اعظم کے مشیر قومی سلامتی معید یوسف کا کہنا تھا کہ 29مارچ سے چار اپریل تک باہر جانے والی پروازوں پر بھی ممانعت اورایئرٹریفک کو بند رکھا جائے گا۔انہوں نے بتایا کہ رابطہ کمیٹی نے مشرقی اور مغربی سرحد مزید دو ہفتے بند رکھنے کا فیصلہ کیا ہے،بھارت،ایران اور افغانستان کے ساتھ سرحد بند رہے گی اور اس پابندی کا اطلاق کرتار پور راہداری پر بھی ہوگا، اسلام آبادسے گلگت اورسکردوکے علاوہ اندرن ملک پروازیں بھی معطل رہیں گی،تھائی لینڈ میں پھنسے پاکستان کل رات پاکستان پہنچ جائیں گے۔وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے صحت ڈاکٹر ظفر مرزا نے بتایا کہ ملک میں مجموعی طور پر7180افراد کو قرنطینہ میں رکھا گیا ہے جن میں زیادہ تعداد زائرین کی ہے،حکومت کی جانب سے ملک میں14لیبارٹریزپی سی آر ٹیسٹ کی سہولت فراہم کررہی ہیں، کورونا وائرس کی تشخیص کیلئے پی سی آر ٹیسٹ کو سب سے مستند مانا جاتا ہے تاہم پی سی آرٹیسٹ کرنیکی درجہ بندی کردی ہے اس وقت صرف سانس کی بیماری کا علامات رکھنے والوں، کورونا وائرس سے متاثرہ ممالک میں وقت گزارنے والوں یا کورونا مریض کے ساتھ وقت گزارنے والوں کو پی سی آر ٹیسٹ کرانا چاہیے،لوگ خوف کا شکار ہیں اور اپنے ٹیسٹ کرانا چاہتے ہیں اورسفارشیں کرواتے ہیں، ٹیسٹ کیلئےسفارشوں سے نقصان ہو گا،ہر شخص کے لیے پی سی آر ٹیسٹ کرانا ضروری نہیں۔

چیئرمین نیشنل ڈزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی(این ڈی ایم اے) لیفٹیننٹ جنرل محمد افضل نے میڈیا بریفنگ میں بتایا کہ چین سے8ڈاکٹرزکی ٹیم اسلام آباد پہنچ گئی ہے، ووہان سے آنیوالی پروازمیں 15وینٹی لیٹرزہوں گے، این ڈی ایم اینے679وینٹی لیٹرزکاآرڈردیاہے، مختلف ممالک سیوینٹی لیٹرز جلد پہنچ جائیں گے۔ کارگوطیارے سے30ہزار ٹیسٹنگ کٹس کراچی پہنچ چکی ہیں۔لیفٹیننٹ جنرل محمد افضل کا کہنا تھا کہ چاہتے ہیں ملک میں لیبارٹریز کی تعداد 40سے50 ہو جائے، کراچی میں 2 لیبارٹریز بنائی جائیں گی، 2 ٹیسٹنگ مشین آزادکشمیرکے حوالے کردی گئیں، خیبرپختونخوا میں بھی نئی لیبارٹریزبنائی جائیں گی، اس کے علاوہ گوجرانوالہ، گجرات، ڈیرہ اسماعیل خان میں لیبارٹریز بنائی جائیں گی،ملک میں لیبارٹریزکی تعداد14سے24تک لیکرجائیں گے۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -کورونا وائرس -