ناقص کارکردگی: وہاڑی میں 10سے زائد اسسٹنٹ ایجوکیشن آفیسرز معطل

ناقص کارکردگی: وہاڑی میں 10سے زائد اسسٹنٹ ایجوکیشن آفیسرز معطل

  

وہاڑی (بیورورپورٹ)چیف ایگزیکٹو ایجوکیشن آفیسر صہیب عمران نے ضلع وہاڑی کے 10 سے زائد اسسٹنٹ ایجوکیشن آفیسرز کو معطل کر دیا گیا اے ای اوز کی معطلی کا نوٹیفکیشن بھی جاری کردیا گیا ہے نوٹیفکیشن کے مطابق اسسٹنٹ ایجوکیشن آفیسرز کو غیر حاضر رہنے اور بہتر کارکردگی نہ دکھانے پر معطل کیا گیا ہے جبکہ دوسری جانب پنجاب بھر کے اے ای اوز لاہور میں ایوان وزیر اعلی پنجاب کے سامنے دھرنا دیئے ہوئے ہیں اے ای اوز کو ریگولر کیئے جانے کی پنجاب حکومت (بقیہ نمبر1صفحہ6پر)

نے شرائط رکھیں تھیں جس میں پی پی ایس سی کے ٹیس پاس کرنے کے بعد ریگولر کیئے جانے کا فیصلہ کیا گیا تھا پنجاب حکومت کی جانب سے پی پی ایس سی ٹیسٹ فیصلے کے خلاف 19 مارچ سے اے ای اوز کا لاہور میں دھرنا جاری ہے اے ای اوز یونین کا کہنا ہے کہ پی پی ایس سی کے ٹیسٹ پاس کرنے کا 2018 میں فیصلہ کیاگیا تھا جو اے ای اوز 2017 کے بھرتی ہیں ان پر یہ شرائط لاگو نہیں کی جاسکتی ہیں انہوں نے کہا کہ چیف ایگزیکٹو آفیسر وہاڑی نے غیر قانونی طور پر اے ایز کو معطل کیا ہے احتجاج ہر پاکستانی شہری کا حق ہے اے ای اوز کو معطل کرکے انکی جگہ ایس ٹی ٹیچرز کو چارج دیا گیا ہے جو غیر قانونی عمل ہے قانون کے مطابق اے ای اوز کی سیٹ پر ایس ایس ٹی ہونا لازمی ہے چیف ایگزیکٹو ایجوکیشن آفیسر وہاڑی نے قانون کی بے ضابطگی کی ہے ایسے غیر قانونی اقدام سے اے ای اوز ڈرنے والے نہیں ہیں احتجاج کا دائرہ کار وسیع کریں گے اور جب تک مطالبات تسلیم نہیں ہوتے احتجاجی مظاہرہ جاری رہے گا جبکہ سی ای او ایجوکیشن آفیسر وہاڑی صہیب عمران نے اپنے موقف میں بتایا ہے کہ صرف وہاڑی میں ہی نہیں بلکہ پورے پنجاب سے کارکردگی کی بنیاد پر ان اے ای اوز کو معطل کیا گیا ھے چارج کے اہل ہیں یہ ہائر اتھارٹی ان اے ای اوز سے بہتر جانتے ہیں انہوں نے کہا کہ ہمارے پاس پاورز ہیں جس کو استعمال کرتے ہوئے ہم نے یہ فیصلہ کیا ہے بہت سے اے ای اوز ہیں جو ریگولر ہیں لیکن احتجاج کر رہے ہیں 25 ہزار تنخواہوں کے علاوہ الاؤنس لے رہے ہیں لیکن کارکردگی نہ ہونے کے برابر ہے۔

ناقص کارکردگی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -