لاہورمیں پولیس ٹیم کاچھاپہ، طالبعلم بازیاب، اغواء کی کہانی ڈرامہ نکلی

لاہورمیں پولیس ٹیم کاچھاپہ، طالبعلم بازیاب، اغواء کی کہانی ڈرامہ نکلی

  

رحیم یارخان(بیورو رپورٹ)ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر کے حکم پر ایس پی انوسٹی گیشن کی زیر نگرانی ڈی ایس پی لیاقت پور اورایس ایچ او تھانہ شیدانی شریف کی قیادت میں اسپیشل انوسٹی گیشن ٹیم نے لاہور میں چھاپہ مارکر2 سال قبل کالج جاتے اغوا ہونے والا طالب علم بازیاب کرالیا۔تفصیل کے مطابق موضع لعل شاہ کے رہائشی عبدالرف نے تھانہ شیدانی شریف میں مقدمہ نمبر 652/19 زیر دفعہ 365 ت پ درج کراتے ہوئے موقف اختیار کیا تھا کہ 11 ویں کلاس (بقیہ نمبر49صفحہ6پر)

میں زیر تعلیم اسکے بھائی محمد اویس ولد محمد اسماعیل قریشی کو نامعلوم ملزمان نے کالج جاتے اغوا کرلیا ہے۔ محمد اویس کے اغوا پر طالبہ یونین نے شدید احتجاج کرتے ہوئے قومی شاہراہ کو بھی کئی گھنٹے بلاک رکھا تھا جس پر یہ کیس پولیس کے لیے ایک چیلنج بن گیا اور پولیس نے بڑی سرگرمی سے مغوی کی تلاش شروع کی۔ مدعی کی تحریری درخواست پر متعدد افراد کو پولیس زیر حراست لیکر تفتیش کرتی رہی مگر نتیجہ صفر نکلا۔ڈی پی او رحیم یار خان اسد سرفراز اورایس پی انوسٹی گیشن رحیم یار خان ارسلان شاہزیب نے جیسے ہی چارج سنبھالا تو انہوں نے اس کیس کو چیلنج کے طور پر لیکر ڈی ایس پی لیاقت پور دستگیر خان لنگاہ ایس ایچ اوشیدانی ملک منظور احمد درگھانے چارج چوکی خان بیلہ شبیر احمد راپرویز احمد رانا و دیگر آفیسران پر مشتمل خصو صی ٹیم بنائی جنہوں نے مقدمہ کی از سر نو تفتیش کا آغاز کرتے ہوئے مغوی محمد اویس کے نادرا کے ب فارم کے ذریعے جدید  ٹیکنالوجی استعمال کی تو انکشاف ہوا کہ محمد اویس ٹھوکر نیاز بیگ پر قائم پناہ گاہ میں ب فارم کے ذریعے مقیم رہا۔ تفتیش کا دائرہ مزید وسیع کیا گیا تو علم ہوا کہ نادرا کی جانب سے محمد اویس کا کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈ جاری ہو چکا ہے اور اس پر کئی موبائل سمیں نکل چکی ہیں جس پر پولیس مسلسل لوکیشن لیتی رہی جو منگلا اور لاہور کی آتی رہی جس پر گزشتہ روز پولیس ٹیم نے لاہور میں کامیاب چھاپہ مار کر 2 سال سے مغوی محمد اویس کو برآمد کرلیا جس نے پولیس کو بیان دیا کہ اسے کسی نے اغوا نہیں کیاتھا وہ اپنی مرضی سے گھر سے نکلا تھا تاہم مغوی کا شناختی کارڈ کسی فیملی ممبر یا بلڈ ریلیشن کی تصدیق کے بغیر کیسے بنا اس سوال کی تحقیقات ہونا ابھی باقی ہے۔

طالبعلم بازیاب 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -