سعودی عرب کیلئے پروازوں کی بندش،عوام مشکلات سے دوچار

سعودی عرب کیلئے پروازوں کی بندش،عوام مشکلات سے دوچار

  

باڑہ (تحریر ذاکر آفریدی)سعودی عرب کے  غیر ملکی فلائٹ بندش کی وجہ سے باڑہ کے  لوگوں کو شدید تکلیف کا سامنا ہے۔س عودی عرب فلائٹ بندش   میں پاکستان بھی شامل ہے۔فلائٹ بندش کی وجہ سے لوگوں کی ویزوں کا معیاد ختم ہو رہا ہے۔جبکہ کچھ لوگوں نے نئے ویزوں کے لئے درخواست دی تھی۔ان کی وجہ سے لوگوں کو بہت تکلیف کا سامناہے۔پورے پاکستان بشمول قبائلی علاقے باڑہ کے عوام شدید کرب سے گزار رہے ہے کیونکہ ان کی ویزوں کی معیاد ختم ہورہی ہے۔جبکہ کئی لوگوں نے نئے ویزوں کے لئے درخواستیں دی تھی۔اس میں ایک جان محمد بھی شامل ہے۔انہوں نے کہا کہ میں نے سعودی عرب کے لئے ویزا حاصل کیا تھا۔ویزا کئی لوگوں سے قرض حاصل کرکے لیاتھا۔اس وجہ سے کہ سعودی عرب جاکر محنت مزدوری کرکے چکا دونگا۔لیکن ہمیں اس وقت دھچکا لگا جب سعودی عرب کے حکومت نے پاکستانی فلائٹ پر پابندی کا اعلان کردیا۔ٹریول ایجنٹ ریاض آفریدی اس حوالے سے کہا کہ کرونا وائرس وبا کی وجہ ہمارے کاروبار کو بہت نقصان پہنچا ہے لیکن دوبارہ بحالی کے بعد کچھ حد تک ہم سنبھال سکے۔ ہمارے ہاں بہت سے لوگ ویزا پراسیس کے لئے آتے ہے۔جب دوبارہ سعودی عرب نے پاکستانی فلائٹ پر سعودی عرب داخلے پر پابندی کا اعلان کر دیا تو اس سے ہمیں بھی نقصان اٹھانا پڑھ رہا ہے۔کیونکہ ہم نے  لوگوں سے ویزا پراسیس فیس حاصل کی ہی ہے۔اس کے ساتھ ائر لائن ٹکٹ بھی لوگوں نے خرید لئے ہے جس سے ہمارے لئے بڑے مسائل پیدا ہوئے ہے۔جان محمد نے کہا کہ میرے ساتھ باڑہ سے ایسے کئی لوگوں کے ویزوں کی معیاد ختم ہورہی ہے اور انہوں نے لوگوں سے قرض لے کر اس  پر ویزے حاصل کئے ہیں۔اب ہم نہ سعودی عرب جا سکتے ہیں اور نہ اب قرضوں کو ادا کرسکتے ہے۔بہت مشکل سے ویزوں کو حاصل کیا تھا۔حالیہ وبائی مرض کرونا وائرس نے  جہاں ہر شعبہ کے افراد متاثر ہوئے اسی اثنا میں باہر ملکوں میں کام کرنے والے مزدور بھی بہت متاثر ہوئے ہیں۔سعودہ عرب میں سفری پابندی کی وجہ سے وہاں پر عیر ملکی ملازمین کی بے روزگاری کے شرخ میں 8.5فیصد کمی واقعہ ہوئی ہے جبکہ سعودی عرب کے ملازمین کی بے روزگاری شرخ میں 14.9فیصد کمی واقعہ ہوئی ہے۔عمان کے نیشنل سنٹر برائے معلومات،شماریات کے مطابق جنوری 2020سے 2021تک تارکین وطن ملازمین میں 14فیصد کمی واقعہ ہوئی ہے۔ریاض آفریدی نے کہا کہ وبائی مرض کے وجہ سے ہمارا کاروبار بھی متاثر ہوا ہے کیونکہ پیچھلے سال بھی حج پر پابندی کی وجہ ہمارے کاروبار کو بھی نقصان پہنچا تھا۔ اب جو سعودی عرب فلائٹ بندش سے بھی دوبارہ متاثر ہورہے ہے ہم تارکین وطن کو ویزا پراسیس اور ٹکٹ فراہم کئے تھے۔اب نہ وہ جاسکتے ہیں نہ یہ پوری پراسیس واپس ہوسکتی ہے۔جان محمد نے کہا کہ حکومت ہمارے لئے سنجیدگی کا مظاہرہ کریں سعودی عرب کے حکومت سے تارکین وطن ملازمین کی داخلے کیلئے اقدامات اٹھائے۔ کیونکہ ہمارے ویزوں کی معیاد ختم ہورہی ہے۔ہمارے لئے حکومت ویزوں کی معیاد بڑھا دیں یا جن کے ویزے اور ٹکٹ کنفرم ہوچکے ہے ان کو وہاں سعودی عرب جانے کی اجازت دی جائے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -