ذاکر خان شہید ہسپتال مٹہ میں،جوڑوں کا کامیاب آپریشن

 ذاکر خان شہید ہسپتال مٹہ میں،جوڑوں کا کامیاب آپریشن

  

مٹہ ( نمائندہ پاکستان) ذاکر خان شہید ہسپتال مٹہ میں ملاکنڈ ڈویژن کے سرکاری ہسپتالوں میں پہلی بار جوڑوں کی مشکل ترین اپریشن کامیابی کیساتھ ہوا ذاکر خان شہید ہسپتال میں اب صوبائی حکومت وزیر اعلیٰ محمود خان اور سابق ضلعی اپوزیشن لیڈر احمد خان کے کوششوں سے دیگر شعبوں میں کامیابی کیساتھ ساتھ ارتھوپیڈک شعبہ میں بھی تاریخی کامیابی حاصل کی ہے مریض بلاخوف اپنے مشکل سے مشکل اپریشن کیلئے مٹہ ہسپتال ایا کریں انچارج ارتھوپیڈک سرجن ڈاکٹر سعید احمد خان کا میڈیا سے بات چیت تفصیلات کے مطابق صوبائی حکومت وزیر اعلیٰ محمود خان اور سابق ضلعی اپوزیشن لیڈر احمد خان کے ذاتی کوششوں سے ذاکر خان شہید ہسپتال میں وہ کامیاب اپریشن بھی شروع ہوچکی ہے جو اس سے پہلے پوری ملاکنڈویژن میں نہیں ہوئے ہیں گذشتہ روز ذاکر خان شہید ہسپتال مٹہ میں ارتھوپیڈک سرجن ڈاکٹر سعید اللہ خان نے مٹہ ہسپتال میں چارج لینے کی بعد ایک کامیاب تاریخی اپریشن کیا جو اس سے پہلے پوری ملاکنڈڈویژن کے سرکاری ہسپتالوں میں اس وقت تک نہیں ہوا اور ایک مریض مسمی امیر نواب ولد گل رحمان سکنہ بریکوٹ جو ایک غریب مریض تھا اور انکو ایک جوڑ مکمل طور پر تبدیل کرنا تھا جو ڈاکٹر سرجن سعید اللہ خان نے ذاکر خان شہید ہسپتال مٹہ میں کامیابی کیساتھ سرانجام دیا انہوں نے اس موقع پر کہا کہ ذاکر خان شہید ہسپتال مٹہ اس وقت صوبائی حکومت وزیر اعلی ٰ محمود خان اور سابق ضلعی اپوزیشن لیڈر احمد خان کے کوششوں سے اس قابل ہوچکا ہے کہ اب یہاں پر ہر کسی قسم کی مشکل سے مشکل ترین اپریشن بھی ممکن ہے انہوں نے کہا کہ مذکورہ مریض جو ایک غریب مریض تھا اور انکو اسکے جسم میں لگانے والے ضروریات کی پیسے نہیں تھے تو انہوں نے ان پیسوں سے جو لوگ انکو اسی طرح مریضوں کی علاج کیلئے عطیہ کرتے ہیں ان پیسوں اور انہوں اپنے ذاتی پاکٹ منی سے دولاکھ روپے لگا کر اس غریب شخص کا مشکل ترین اپریشن کو ممکن ہوا انہوں نے کہا کہ اگر یہ اپریشن پشاور یااسلام اباد میں کیا جاتا تو اس پر سات لاکھ روپے سے زیادہ خرچ اتا تھا جو کسی بھی غریب ادمی کی بس کی بات نہیں 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -