جلسے کی کوریج سے میڈیا کو روکنا ناکامی کا اعتراف، پابندی شرمناک فیصلہ: پیپلز پارٹی 

جلسے کی کوریج سے میڈیا کو روکنا ناکامی کا اعتراف، پابندی شرمناک فیصلہ: پیپلز ...

  

         اسلام آباد (نیوز ایجنسیاں) حکومتی جماعت کے جلسے کی کوریج سے نجی چینلز کو روکنا ناکامی کا ایک اور اعتراف،پیپلزپارٹی خاتون صحافی سمیت میڈیا نمائندوں پر حملہ اور ہراساں کرنے کی مذمت کرتی ہے،شیخ رشید ملک کے وزیر داخلہ ہیں یا گلی کے غنڈے، حکومت کا آزاد میڈیا پر پابندی کا حکم نامہ شرمناک فیصلہ ہے۔تفصیلات کے مطابق سیکرٹری جنرل پیپلز پارٹی نیئر حسین بخاری نے کہاہے کہ حکومتی جماعت کے جلسے کی کوریج سے نجی چینلز کو روکنا ناکامی کا ایک اور اعتراف ہے،میڈیا کی پیداوار جماعت اور حکومت کا آزاد میڈیا پر پابندی کا حکم نامہ شرمناک فیصلہ ہے۔انہوں نے کہاکہ صرف سرکاری ٹی وی سے کوریج کا فیصلہ عوامی اعتماد سے محرومی کا سرکاری اعلان عام ہے۔انہوں نے کہاکہ گھبرانا نہیں والا میڈیا کی آزادی سے گھبرا گیا ہے،لاکھوں کے جلسے کا دعویٰ بھی جھوٹ کا پلندہ نکلا، آزاد میڈیا پر پابندی سے ثابت ہو گیا، عمران خان نے اسلام آباد جلسی سے خطاب کا فیصلہ کیا۔ پیپلز پارٹی کی رہنما شازیہ مری نے کہا ہے کہ شیخ رشید ملک کے وزیر داخلہ ہیں یا گلی کے غنڈے، پی ٹی آئی کارکنوں کی جانب سے خاتون صحافی کو اسلام آباد میں کوریج کے دوران ہراساں کرنے کے معاملے پر انہوں نے اپنے ردعمل میں کہا کہ پیپلزپارٹی میڈیا نمائندوں پر حملہ اور ہراساں کرنے کی مذمت کرتی ہے، پہلے پی ٹی آئی نے پرائیویٹ میڈیا چینلز کو اپنے جلسے کی کوریج سے روکا اور اب وہ صحافیوں کو خاموش کرانے کیلئے حملہ کرنا چاہتے ہیں۔ شازیہ مری کا کہنا تھا کہ حکومت پی ٹی وی کو جلسے کی کوریج کے لیے استعمال کر رہی ہے لیکن ماضی میں اسی پی ٹی وی پر پی ٹی آئی نے حملہ بھی کیا تھا۔وزیر داخلہ شیخ رشید کی پریس کانفرنس پر ترجمان پی پی پی پارلیمنٹرین شازیہ مری ے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ سب کو پتہ ہے کہ یہ کتنے بڑے طرم خان ہیں، گیدڑ بھبکیاں نہ ماریں اور دھمکیاں اپنے گھر میں سنبھال کر رکھیں۔

  پیپلز پارٹی 

مزید :

صفحہ آخر -