بیلٹ باکس کو چوری کرنیوالے کا ہاتھ کاٹ دینگے‘ مشتاق احمد

بیلٹ باکس کو چوری کرنیوالے کا ہاتھ کاٹ دینگے‘ مشتاق احمد

  

تیمرگرہ (بیورورپورٹ)بیلٹ باکس کو چوری کرنے والے ہاتھ کاٹ دینگے۔پی ٹی آئی نے یوتھ کے ساتھ کھلواڑ کیا۔چور اور کرپٹ ممبران نقل مکانی کے لئے تیار ہیں۔فارن فنڈنگ کیس میں انڈین اور اسرائیلی لابی نے پی ٹی آئی کو فنڈز دیئے، احتساب کیا جائے۔ حکومت نے کمراٹ،شاہی،لڑم اور چترال کی سیاحتی مقامات کے نام پر فنڈز اکھٹا کرکے ہڑپ کیے،پی ٹی ائی قیادت کے نام احتساب کے لئے ای سی ایل پر ڈال دیئے جائیں، ان خیالات کا اظہار جماعت اسلامی کے صوبائی امیر سینیٹر مشتاق احمد خان نے تیمرگرہ ریسٹ ہاؤس گراؤنڈ پر ایک بڑے جلسے عام سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔جلسے میں ہزاروں کی تعداد میں لوگوں نے شرکت کی۔جلسے سے جماعت اسلامی کے مرکزی امیر سراج الحق،ضلعی امیر اعزاز الملک افکاری،ارشد زمان ودیگر نے شرکت کی۔ جلسے سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر مشتاق احمد خان نے پی ٹی ائی حکومت کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ پی ٹی ائی کی حکومت نے دیر،چترال کے عوام کے ساتھ کھلواڑ کیا ہے جان بوجھ کر علاقے کو پسماندہ رکھا گیا ہے بیرون ممالک سے دیر چترال کے سیاحتی مقامات کے نام پر فنڈز اکھٹے کیے گئے اور سیاحتی مقامات میں ایک آنے کا ترقیاتی کام نہیں گیا۔دیر چترال کے عوام ک31مارچ کو ترازو پر مہر لگا کر پی ٹی ائی سے اپنی محرمیوں کا بدلہ لیں گے انھوں نے کہاکہ پی ٹی ائی کی حکومت نے دیر،چترال کے عوام سے روزگار چھین لیا ہے علاقے کے کاروبار کو ویران اور تباہ کیا،سالانہ ترقیاتی کاموں میں علاقے سے سوتیلی ماں جیسا سلوک کیا گیا جبکہ ممبران کے نام پر کرپٹ اور نااہل ٹولے کو مسلط کرکے علاقے کو پسماندگی کی جانب دھکیلا گیا۔ انھوں نے کہاکہ بلدیاتی الیکشن میں بیلٹ باکس کو چوری کرنے والے ہاتھوں کو کاٹ دینگے انھوں نے خبردار کیاکہ کسی بھی قسم کی دھاندلی سے آہنی ہاتھوں سے نمٹیں گے انھوں نے کارکنان کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ ہر صورت میں بیلٹ باکس کا تحفظ یقینی بنائے اور جعلی مینڈیٹ مسلط کرنے والوں کا راستہ روکے،سینیٹر مشتاق نے مزیدکہاکہ مہنگائی کی سونامی نے عوام کا بھرکس نکال دیا روزمرہ اشیاء کی قیمتوں میں روز افزوں اضافے کی وجہ سے عوام ذہنی بیماریوں میں مبتلا ہوچکے ہیں کاروباری طبقہ فاقوں پر آگیا تعمیراتی میٹریل مہنگا ہونے کی وجہ سے کاروبار ٹھپ ہوکر رہ گیا جبکہ گورنر اور وزیر اعلیٰ کی شاہ خرچیوں میں بے تحاشا اضافہ عوام کیساتھ مذاق اڑانے کے مترادف ہیں 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -