(ن) لیگ کے اعلٰی سطحی وفد کی چوہدری برادران سے ملاقات، تحریک عدم اعتماد پر تبادلہ خیال 

(ن) لیگ کے اعلٰی سطحی وفد کی چوہدری برادران سے ملاقات، تحریک عدم اعتماد پر ...

  

   اسلام آباد(آن لائن)مسلم لیگ (ن)کے اعلیٰ سطحی وفد کی چودھری برادران کی رہائش گاہ آمد، سابق وزیراعظم چودھری شجاعت حسین اور سپیکر پنجاب اسمبلی چودھری پرویزالٰہی سے ملاقات، تحریک عدم اعتماد، موجودہ ملکی سیاسی صورتحال سمیت باہمی دلچسپی کے امور پر تفصیلی تبادلہ خیال،دونوں جماعتوں کی قیادت کے درمیان آئندہ لائحہ عمل کے بارے مشاورت جاری رکھنے پر اتفاق۔تفصیلات کے مطابق ملاقات میں وفاقی وزرا ء طارق بشیر چیمہ، مونس الٰہی، ارکان قومی اسمبلی سالک حسین، حسین الٰہی، محترمہ فرخ خان اور سینیٹر کامل علی آغا جبکہ (ن)لیگ کے وفد میں خواجہ محمد آصف، رانا تنویر حسین، سردار ایاز صادق،رانا ثناء اللہ خان، خواجہ سعد رفیق اور عطاء اللہ تارڑ شامل تھے،ملاقات میں سابق صدر محمد رفیق تارڑ کے ایثال ثواب کیلئے بھی دعا کی گئی۔ملاقات کے بعد پاکستان مسلم لیگ (ن) کے وفد کے ہمراہ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے طارق بشیر چیمہ نے کہا کہ حکومت کے ساتھ ساڑھے تین سال کا تجربہ اچھا نہیں رہا،عمران خان کیخلاف عدم اعتماد کی تحریک پر مشاورت ہوئی ہے، ایک دو روز میں جو بھی فیصلہ ہوگا سامنے آجائے گا۔ انہوں نے کہاکہ ایم کیو ایم اور بلوچستان عوامی پارٹی کے اپنے مسائل ہیں۔خواجہ سعد رفیق کا اس موقع پر کہنا تھا کہ ہم نے بڑی تفصیل سے مشاورت کی ہے جو جاری رہے گی، ہمارے دیرینہ تعلقات ہیں، ہم نے چودھری برادران سے مل کر کام کیا، ق لیگ اور ن کے درمیان سرد مہری نہیں ہے، ہمارے درمیان برف پگھل چکی ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ بطور سپیکر پنجاب اسمبلی پرویز الٰہی نے بہترین کام کیا، اگر پاکستان کو مسائل سے نکالنا ہے تو اس حکومت کو گھر جانا ہوگا،عمران خان نے قوم سے جھوٹ بولا اور گالیاں دیں، وزیراعظم نے پونے چار سال میں پاکستانی معیشت کا ستیاناس کر دیا۔ 

مسلم لیگ(ن)(ق)

مزید :

صفحہ اول -