مسلم لیگ (ق) اور حکومتی وفد کی ملاقات، وزارت اعلیٰ کی بات ہوئی یا نہیں؟ سب واضح ہوگیا

مسلم لیگ (ق) اور حکومتی وفد کی ملاقات، وزارت اعلیٰ کی بات ہوئی یا نہیں؟ سب ...
مسلم لیگ (ق) اور حکومتی وفد کی ملاقات، وزارت اعلیٰ کی بات ہوئی یا نہیں؟ سب واضح ہوگیا

  

اسلام آباد ( ڈیلی پاکستان آن لائن)    وفاقی حکومت کے وفد اور مسلم لیگ (ق) کی قیادت میں اسلام آباد میں  ملاقات ہوئی، ترجمان مسلم لیگ (ق) نے بتایا کہ ملاقات میں پنجاب کی وزارت اعلیٰ سے متعلق کوئی بات نہیں ہوئی ۔ 

ملک کی  سیاسی صورتحال کا پارہ عروج پر پہنچ گیا ہے  جہاں حکومتی اتحادی نگاہوں کا مرکز بنے ہوئے ، اتحادیوں کو اپنے ساتھ ملانے کیلئے اپوزیشن اور حکومتی جماعتیں  دونوں ہی کوشاں ہیں ، آج حکومتی وفد نے چودھری برادران سے ملاقات کی جہاں انکے گلے شکوے سنے، ملاقات میں  تحریک عدم اعتماد سمیت دیگر سیاسی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ملاقات میں مسلم لیگ (ق) کی جانب سے چودھری پرویز الٰہی ، مونس الٰہی ، طارق بشیر چیمہ ، سالک حسین  اور حسین الٰہی  شامل ہوئے  جبکہ حکومتی وفد میں اسد عمر ، شاہ محمود قریشی  اور پرویز خٹک شامل تھے ۔

 ترجمان مسلم لیگ (ق) نے ملاقات کے بعد کہا کہ ملاقات میں پنجاب کی وزارت اعلیٰ سے متعلق کوئی بات نہیں ہوئی ،  چودھری پرویز الٰہی نے کہا کہ  تمام اتحادیوں کے ساتھ مل کر مشترکہ فیصلہ کریں گے ۔  وفاقی وزیر اسد عمرنے کہا کہ  ہماری بہت اچھی اور مثبت بات چیت ہوئی ، گلے شکوے اپنوں سے ہی ہوتے ہیں جہاں کوئی امید ہو ، وہاں ہی گلہ ہوتا ہے ۔ وفاقی وزیر شاہ محمود قریشی نے کہا کہ چودھری برادران ابھی تک حکومت کے ساتھ کھڑے ہوئے ہیں ۔

خیال رہے کہ اس سے قبل نجی ٹی وی اے آر وائی نیوز نے دعویٰ کیا تھا کہ  وزیر اعظم عمران خان نے وزارت اعلیٰ ق لیگ کو دینے کیلئے گرین سگنل دیدیا ہے اور ق لیگ سے پہلے جیسے اتحادی رہنے اور ساتھ دینے کی اپیل کی ہے ۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -سیاست -