سوئس پولیس کے ہاتھوں فیفا کے 5عہددیدار کرپشن کے الزامات میں گرفتار

سوئس پولیس کے ہاتھوں فیفا کے 5عہددیدار کرپشن کے الزامات میں گرفتار

 زیورخ( نیٹ نیوز) سوئٹزرلینڈ میں پولیس نے فٹ بال کی عالمی تنظیم فیفا کے 6 عہدیداروں کو کرپشن اور رشوت ستانی کے الزام میں گرفتارکرلیا۔ فیفا کے ترجمان نے باڈی کے صدر سیپ بلاٹر اور جنرل سیکرٹری جیروم والکے کے کرپشن میں ملوث نہ ہونے کی وضاحت جاری کر دی۔ غیرملکی میڈیا کے مطابق سوئٹزر لینڈ کے دارالحکومت زیورخ میں پولیس نے گزشتہ 2 دہائیوں کے دوران فٹ بال کے عالمی مقابلوں کی میزبانی کے حصول اورمقابلوں کی تشہیر اور نشریات کے معاہدوں میں کرپشن کے الزام میں فیفا کے اعلیٰ ترین عہدیداروں کی قیام گاہوں میں کارروائی کرتے ہوئے انہیں حراست میں لے کر مزید تفتیش شروع کر دی ہے۔ گرفتار کئے گئے حکام فیفا کے 2 روزہ سالانہ اجلاس میں شرکت کیلئے زیورخ پہنچے تھے۔ ان افراد کو امریکہ کے حوالے کیا جائے گا جہاں ان پر مالی بدعنوانی اور منی لانڈرنگ کے الزامات کے تحت مقدمہ چلایا جائے گا۔ سوئس پولیس نے گرفتار کئے جانے والے افراد کی حتمی تعداد یا نام نہیں بتائے تاہم فیفا حکام نے گرفتاریوں کی تصدیق کردی ہے۔ فیفا کے ترجمان نے باڈی کے موجودہ صدر سیپ بلاٹری اور جنرل سیکٹری جیروم والکے 2018ء اور 2022ء ورلڈ کپ ٹورنامنٹس کی میزبانی کے حوالے سے کرپشن میں ملوث نہیں اور دونوں عہدیدار پلان کے مطابق سالانہ اجلاس میں شرکت کریں گے۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...