حکومت امن و امان قائم رکھنے میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی، اعجاز احمد ہاشمی

حکومت امن و امان قائم رکھنے میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی، اعجاز احمد ہاشمی

 لاہور(نمائندہ خصوصی) جمعیت علما پاکستان کے مرکزی صدر پیر اعجاز احمد ہاشمی نے کہا ہے کہ حکومت امن و امان قائم رکھنے میں مکمل طور پر ناکام ہوچکی ہے۔سندھ میں نقاب پوش کمانڈو ز کا صحافیوں پر تشدد اور ڈسکہ میں بار ایسوسی ایشن کے صدر سمیت دو وکلا کا قتل افسوسناک پولیس کے عمومی رویے کی عکاسی ہے۔ وکلا کے مطالبات تسلیم نہ کیا جانا معاملات کو مزید بگاڑ سکتا ہے۔ حکومت ہوش کے ناخن لے۔ایک بیان میں پیر اعجاز ہاشمی نے کہا کہ ملک بھر میں وکلا کی ہڑتال سے جو حالات پیدا ہوئے ہیں ان کو قابو کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے۔ ڈسکہ میں وکلا کے قتل سے اب تک سڑکوں پرجو کھیل سرکاری اور نجی املاک کے ساتھ سلوک جاری ہے ۔ حکومت کہیں نظر نہیں آتی۔پنجاب اسمبلی کوآگ لگانے کی کوشش کی گئی جو کہ جمہوریت کی توہین ،آئین اور قانون کے محافظ خود وکلا کے لئے بھی باعث شرم ہے۔پیر اعجاز ہاشمی نے کہا کہ سندھ حکومت کو ذوالفقار مرزا نے نچایا ہوا ہے۔ وہ ایسا تماشا ہے کہ سنبھلنے کو نہیں آرہا۔ آصف علی زرداری میاں نوا زشریف کی حکومت کے تحفظ کے لئے پہنچ جاتے ہیں، اپنی صوبائی حکومت پر بھی توجہ دیں اور وزیر اعلیٰ سندھ کی بھی مدد کریں۔ عسکری ادارے بھی امن و امان کی بگڑتی صورت حال پر تشویش کا اظہار چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پولیس کی غیر ذمہ داری کے باعث واقعات جنم لیتے ہیں۔    ، ابھی تک سانحہ ماڈل ٹاون سے مسلم لیگ ن کی حکومت کی جان نہیں چھوٹی کہ مزید واقعات ہوگئے ہیں۔ وزارت داخلہ کو جدید خطوط پر پولیس کی تربیت کرنی چاہیے کہ وہ اشتعال انگیزی میں بھی اپنی ذاتیات سے بالا تر قانون کے تحفظ کا کام کرے نہ کہ حکومتی یا ذاتی پسند نہ پسند کو سامنے رکھے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...