پاکستان اپنی فلاح چاہتا ہے تو دوسرے ممالک میں مداخلت بند کر دے ‘ بھارتی وزیر اخلہ

پاکستان اپنی فلاح چاہتا ہے تو دوسرے ممالک میں مداخلت بند کر دے ‘ بھارتی وزیر ...

 جموں(اے این این) بھارتی وزیرداخلہ راج ناتھ سنگھ نے پاکستان پربھارت کے داخلی معاملات میں مداخلت کاالزام عائدکرتے ہوئے دھمکی دی ہے کہ اگر ہمسایہ ملک اپنی فلاح چاہتاہے تو دوسرے ملکوں کے معاملات میں مداخلت کاسلسلہ ترک کردے ،ہم نے ہمیشہ پاکستان کی طرف دوستی کاہاتھ بڑھایا مگردوسری جانب سے ہماری پیٹھ میں چھراگھونپاگیا ،کشمیرمیں پاکستان کے حق میں نعرے بازی اوراس کاپرچم لہرایاجانابرداشت نہیں کرسکتے ۔جموں میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے راج ناتھ سنگھ نے کہاکہ اگرپاکستان اپنی فلاح چاہتاہے تواسے دوسرے ملکوں کے معاملات میں مداخلت کاسلسلہ اوربھارت کے حوالے سے اپنی مذموم سرگرمیاں ترک کردینی چاہئیں ۔انہوں نے کہاکہ بھارت اپنی سالمیت اورخودمختاری کونقصان پہنچانے والوں منہ توڑجواب دے گا۔ہمیں اپنی فوج،پیراملٹری فورس پراعتمادکرناچاہیے اوران کی صلاحیتوں اورحب الوطنی پرکوئی سوال نہیں اٹھایاجاسکتا۔راج ناتھ سنگھ نے کہاکہ پاکستان کواپنے اعمال کے بارے میں ضرورسوچناچاہیے اس نے کبھی ہماری کسی کوشش کامثبت جواب نہیں دیا۔انہوں نے کہاکہ ہم کشمیرمیں حریت پسندقیادت کیساتھ تمام معاملات پربات چیت کیلئے تیارہیں جمہوریت میں بات چیت کے دروازے ہمیشہ کھلے رہتے ہیں تاہم یہ ہرگزبرداشت نہیں کرینگے ریاست میں پاکستان کے حق میں نعرے لگیں اوراس کاپرچم لہرایاجائے۔

نئی دہلی(اے این این)بھارتی وزیردفاع منوہرپاریکرنے کہاہے کہ دہشت گردی سے نمٹنے کیلئے دہشت گردی کے استعمال سے متعلق ان کے بیان پر صرف ایک ملک نے سخت ردعمل کااظہار کیا ، 13لاکھ کی مضبوط فوج کو ئی امن کا پرچار کرنے کیلئے نہیں رکھتا ، اپنے ملک کو بچانے کیلئے میں کسی بھی حد تک جاؤں گاجو کچھ بھی کرنا چاہیے کیا جائے گا۔میڈیارپورٹ کے مطابق اپنے ایک تازہ انٹرویومیں منوہرپاریکرنے دہشت گردوں کے خلاف دہشت گردوں کے استعمال سے متعلق اپنے بیان کی وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ یہ تاثر غلط ہے کہ میں نے کسی خفیہ کارروائی سے متعلق کوئی بات کی تھی ۔ا نہو ں نے پاکستان کا نام لیے بغیر کہا کہ ان کے بیان پر صرف ایک ملک کی طرف سے سخت ردعمل کااظہار کیا گیا ۔ انہوں نے کہاکہ مجھ سے آزاد کشمیر میں پاکستان کی حمایت سے عسکریت پسندوں کے تربیتی کیمپوں سے متعلق سوال پوچھا گیا تھا چنانچہ میرا ردعمل اسی سوال پر مبنی تھا۔ ختم کرنے کا مطلب صرف مارنے سے نہیں ہوتا بلکہ دہشت گردوں کو اپنی طرف کرنے یا سرنڈر کرانے سے بھی ہے ۔ بھارتی وزیردفاع نے کہا کہ ان کے ریمارکس کسی مخصوص شخص کے بارے میں نہیں بلکہ عمومی تھے لیکن ان ریمارکس کے صرف ایک حصے کو بڑھا چڑھا کر پیش کیا گیاتاہم انہو ں نے کہاکہ بنیادی طور پر اگر مجھے اپنے ملک کو بچانا ہے تو میں کسی بھی حد تک جاؤں گاجو کچھ بھی کرنا چاہیے کیا جائے گا ۔اگر کوئی میرے ملک کو نقصان پہنچاتا ہے تو مجھے پیشگی اقدامات کرنے ہیں فوج کا بنیادی مقصد یہ ہوتاہے کہ جب کوئی ملک حملہ کرے تو اس پر جوابی حملہ کیا جائے اسی انداز میں اسے بھرپور جواب دیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیرمیں فوج کو ہدایت دے گئی ہے کہ اگر کوئی ان پر گولی چلائے تواسے ہلاک کر دیاجائے میں نے فوج کو بتادیا ہے کہ انہیں ہچکچاہٹ محسوس نہیں کرنی چاہیے ۔

مزید : علاقائی