چاند۔۔۔ ایک ہی روز!

چاند۔۔۔ ایک ہی روز!

رمضان المبارک کی آمد آمد ہے، اس کے ساتھ ہی اہلِ پاکستان کے ذہنوں میں یہ خدشہ سر اٹھا رہا ہے کہ کیا اِس بار بھی رمضان اور پھر عید کے چاند پر اختلاف ہو گا اور پوپلزئی اپنا اعلان کریں گے۔ مولانا پوپلزئی سرکاری روئت ہلال کمیٹی کو خاطر میں نہیں لاتے اور اپنی مسجد میں بیٹھ کر اپنے سامنے آنے والی شہادتوں پر صاد کرتے اور رمضان المبارک اور عیدالفطر کے چاند کا اعلان کرتے ہیں، جبکہ سرکاری روئت ہلال کمیٹی محکمہ موسمیات، ماحولیات اور سائنس کے دوسرے شعبوں کی معاونت سے چاروں صوبائی روئت ہلال کمیٹیوں کی مشاورت سے چاند کا اعلان کرتی ہے،ہر بار ان کے درمیان تاریخ پر اختلاف ہوتا ہے اور یوں مُلک میں رمضان اور شوال کے دو دو چاند ہوتے اور عیدیں بھی دو ہو جاتی ہیں۔وفاقی وزیر مذہبی امور سردار یوسف نے کہا ہے کہ اِس بار کوشش کی جائے گی کہ اختلاف نہ ہو اِس سلسلے میں مولانا پوپلزئی اور مفتی منیب الرحمن دونوں سے مشاورت کی جائے گی۔یہ جذبہ نیک اور صائب ہے، اب تک تو کسی کو اِس میں کامیابی نہیں ہو سکی، اب وزیر موصوف نے بیڑہ اٹھایا ہے، تو اس کی کامیابی کے لئے دُعا کی جا سکتی ہے۔اصل میں صوبہ خیبرپختونخوا کے ایک طبقہ فکر نے جو پوپلزئی اور مسجد مہابت خان پر یقین رکھتے ہیں، ہمیشہ رمضان اور عید کا چاند سعودی عرب کے ساتھ رکھنے کی کوشش کی اور اِسی کے مطابق روزہ رکھا اور نمازِ عید ادا کی۔مرکزی روئت ہلال کمیٹی باقاعدہ اجلاس منعقد کرتی ہے اور سائنسی معلومات سے بھی استفادہ کرتی اور پھر تصدیق سے اعلان کیا جاتا ہے۔ یہ سرکاری طور پر ہے اور اِس سے پہلے سردار یوسف اسلام آباد میں نمازوں کے اوقات اور اذان ایک ہی لمحے کرانے میں کامیاب ہو چکے ہیں، ہم بھی دُعا کرتے ہیں کہ اللہ کرے یہ مہم بھی کامیاب ہو اور ایک ہی عید ہو!

مزید : اداریہ

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...