سعودی عرب میں رواں سال قتل کے 89مجرموں کے سرقلم

سعودی عرب میں رواں سال قتل کے 89مجرموں کے سرقلم
سعودی عرب میں رواں سال قتل کے 89مجرموں کے سرقلم

  

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں قتل کے ایک مجرم کا سرقلم کردیاگیاجس کے بعد رواں سال سزاکا سامنا کرنیوالے قتل کی مجرموں کی تعداد89ہوگئی ، یہ تعداد پہلے پانچ ماہ میں ہی 2014ءمیں سزاکاسامنا کرنیوالے مجرموں سے زیادہ ہے ۔

لبنانی اخبار’ڈیلی سٹار‘ کے مطابق سعدبن حسین دغریری اپنے ہی ہم وطن کے قتل میں ملوث پایاگیاجس کی وجہ سے اس کا سرقلم کردیاگیا۔ وزارت داخلہ نے اپنے ایک بیان میں کہاکہ سزاپر عمل درآمد جنوبی سعودی عرب میں جزان کے علاقے میں کیاگیا۔

خبررساں ایجنسی کے مطابق ریاست میں قتل پر موت کی سزا کا سامنے کرنیوالے ملکی وغیرملکیوں سمیت دغیریری 89ویں مجرم تھے جبکہ انسانی حقوق کی تنظیموں کا کہناہے کہ مجرم کا ٹرائل شفاف نہیں ہوا، 2014ءمیں 87مجرموں کو سزائیں دی گئی تھیں ۔

سعودی عرب میں رائج نظام انصاف کے مطابق منشیات کی منتقلی ، ریپ ، قتل ،توہین اور ڈکیتی کی سزاموت ہے ، سزاپر عمل درآمد عمومی طورپر عوامی مقامات پر ہوتاہے اور تلوار سے سرکاٹ دیاجاتاہے ۔

مزید : جرم و انصاف