اتفاق فاﺅنڈری ریفرنس ، شریف فیملی باعزت بری ، چیئرمین نیب کی ریفرنس ری اوپن کرنے کی درخواست مسترد

اتفاق فاﺅنڈری ریفرنس ، شریف فیملی باعزت بری ، چیئرمین نیب کی ریفرنس ری اوپن ...
اتفاق فاﺅنڈری ریفرنس ، شریف فیملی باعزت بری ، چیئرمین نیب کی ریفرنس ری اوپن کرنے کی درخواست مسترد

  

راولپنڈی (مانیٹرنگ ڈیسک)15سال سے زیرالتوءاتفاق فاﺅنڈری ریفرنس کیس میں وزیراعظم ، وزیراعلیٰ پنجاب ، ان کی فیملی اور شراکت دار باعزت بری ہوگئے ہیں جبکہ عدالت نے چیئرمین نیب کی ریفرنس ری اوپن کرنے کی درخواست بھی مسترد کردی ۔

نجی ٹی وی چینل کے مطابق اتفاق فاﺅنڈری ریفرنس کی سماعت احتساب عدالت نمبر تین کے جج سہیل ناصر نے کی ۔ فریقین کے دلائل مکمل ہونے پر عدالت نے نوازشریف ، شہبازشریف ، دونوں کی فیملی ،مرحوم میاں شریف اور عباس شریف سمیت بزنس پارٹربھی بری کردیئے اور قرار دیاہے کہ مقدمہ جھوٹا اور سیاسی انتقام تھا، اس کے کوئی شواہد نہیں ، نہ ہی نیشنل بینک اور اتفاق فاﺅنڈری میں کوئی تنازع تھا۔

یادرہے کہ سابق فوجی صدر پرویز مشرف کے دورحکومت یعنی 2001ءمیں شریف فیملی کیخلاف ریفرنس بنایاگیاتھا اور 12اپریل 2001ءکے بعد سماعت غیرمعینہ مدت کے لیے ملتوی کردی گئی تھی ۔ شریف فیملی پر الزام ہے کہ اُنہوں نے نیشنل بینک سے ایک ارب چھ کروڑ اکتیس لاکھ باسٹھ ہزار روپے سے زائد کا قرض لیا اور پھر واپس نہیں کیا۔

مزید : قومی /اہم خبریں