فلوجہ میں داعش کے خود کش حملے، 55 عراقی فوجی ہلاک

فلوجہ میں داعش کے خود کش حملے، 55 عراقی فوجی ہلاک
فلوجہ میں داعش کے خود کش حملے، 55 عراقی فوجی ہلاک

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

بغداد (ویب ڈیسک) شام اور عراق میں سرگرم داعش جنگجوؤں نے فلوجہ میں خود کش حملے کرکے عرق کے 55 فوجیوں کو ہلاک کردیا ہے جبکہ درجنوں زخمی ہوئے ہیں۔ خبر رساں ایجنسی اے ایف پی کے مطابق جنگجوؤں نے صوبہ انبار میں تین خود کش حملے اس فوجی قافلے پر کے جو رمادی کا داعش سے قبضہ چھڑانے کیلئے آپریشن میں شامل ہونے کے لئے جارہے تھے۔ داعش کی جانب سے کئے جانے والے حملے گزشتہ دنوں میں سب سے بڑے حملے تصور کئے جارہے ہیں۔ یاد رہے عراق میں خود کش بم دھماکہ سب سے زیادہ خطرناک تصور کیا جاتا ہے اور زیادہ تر جنگجو اور دہشت گرد یہی طریقہ اختیار کرتے ہیں۔ داعش کی طرف سے ہونیوالے بم دھماکوں کے بارے میں عراقی فوج کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل سعد مان ابراہیم نے کہا ہے کہ حملوں میں 17 فوجی ہلاک ہوئے ہیں۔ یہ حملہ گزشتہ شب فلوجہ کے قریب کیا گیا، جو اسلامک اسٹیٹ کے قبضے میں ہے۔ ان کے بقول شدت پسندوں نے فوجیوں کو پانی کے تقسیم کرنے والے ایک مرکز کے قریب نشانہ بنایا۔ یہ اہلکار انبار میں فوجی آپریشن شروع کرنے کے انتظار میں یہاں جمع تھے۔ ترجمان نے مزید بتایا کہ آئی ایس کے دہشت گردوں نے گزشتہ شب عراق میں ریت کے طوفان کا فائدہ اٹھاتے ہوئے یہ خود کش حملے کئے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی