سعودی خواتین مردوں سے زیادہ شیشہ پینے لگیں

سعودی خواتین مردوں سے زیادہ شیشہ پینے لگیں
سعودی خواتین مردوں سے زیادہ شیشہ پینے لگیں

  

ریاض (ویب ڈیسک) سعودی عرب میں ایسا لگتا ہے کہ خواتین کی محفلوں میں شیشہ اور سگریٹ جدید فیشن کے لوازمات میں شامل ہوگئے ہیں جہاں تمباکو نوشی ضروری سمجھی جاتی ہے۔ عرب نیوز کی رپورٹ کے مطابق نفسیاتی اور سماجی ماہرین کے بتایا ایسی خواتین کی تعداد بڑھتی جارہی ہے، جو سماجی وقار کے لئے تمباکو نوشی کرتی ہیں اور یہ ایک خطرناک رجحان ہے۔ تمباکو نوشی کے خلاف جنگ میں مہارت رکھنے والی ایک فلاحی تنظیم نقاکے ایک عہدے دار نے کہا کہ سعودی مردوں سے زیادہ خواتین شیشہ کا استعمال کرتی ہیں۔ انہوں نے نشاندہی کی کہ تمباکو نوشی کرنے والی خواتین کی عمریں 30 سے 40 سال کے درمیان ہیں۔

مزید : بین الاقوامی