میونسپل کمیٹی بہاولنگر ‘ واٹررینٹ برانچ میں تعینات استاد ‘ شاگرد کی نان سٹاپ کرپشن

میونسپل کمیٹی بہاولنگر ‘ واٹررینٹ برانچ میں تعینات استاد ‘ شاگرد کی نان ...

  



بہاولنگر(نمائندہ خصوصی) میونسپل کمیٹی بہاولنگر کی واٹر رینٹ برانچ میں تعینات دو پلمبرز استاد شاگرد نے کرپشن کے تمام ریکارڈ توڑ دیئے،مذکورہ اہلکاروںکی وجہ سےاربوں روپے خرچ (بقیہ نمبر46صفحہ7پر )

ہونے کے باوجود شہری پینے کے صاف پانی کو ترس رہ ہیں، سجاد عرف شادا اور بشیرعرف بشیراں کی جوڑی نے اندرون شہر سمیت نظام پورہ،ڈسپوزل روڈ،فاروق آبادشرقی غربی،نذیر عاکوکا کی رہائشی علاقہ ،بستی قریش،مدینہ ٹاﺅن میں واٹر سپلائی کو تباہ وبرباد کردیا۔ناجائز کنکشن کے عوض ہزاروں روپے وصول کیئے جانے لگا،افسران کے علم میںہونے کے باوجودمذکورہ اہلکاران کے خلاف کاروائی عمل میں نہیں لائی جاسکی۔عوامی حلقوں کا ڈپٹی کمشنر بہاولنگر سے نوٹس لینے کا مطالبہ ۔ذرائع کے مطابق تحصیل میونسپل کمیٹی میں بے ضابطگیاں اور بدعنوانیوں کے باعث شہری بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں ۔میونسپل کمیٹی کی واٹر رینٹ برانچ میں عرصہ دراز سے تعینات مشہور پلمبرز کی جوڑی نے کرپشن کے تمام ریکارڈ توڑ دیئے،اساتذہ شاگرد کی مشہور جوڑی کے باعث کروڑوں روپے کی خطیر رقم خرچ ہونے کے باعث شہری صاف پانی کی فراہمی کو ترس رہے ہیں ۔شہر اور گردنواح کا کوئی علاقہ ایسے نہیں جو ان کے ہاتھوں سے محفوظ ہیں مذکورہ اہلکاران نے ناجائز کنکشوں کے باعث درجنوںواٹر سپلائی کی پائپ لائنوں اور سٹرکوں کو تباہ وبرباد کر کے نہ صرف قومی خزانے کو لاکھوں روپے کا نقصان پہنچایا بلکہ شہریوں سے بھی ہزاروں روپے فی کنکشن وصول کیئے ۔افسوسناک امر یہ ہے کہ میونسپل کمیٹی کے اعلی افسران کی علم میں ہونے کے باعث انکے خلاف کاروائی نہ ہونا پنجاب حکومت کی گڈگورننس پر سوالیہ نشان ہے۔شہریوں نے ڈپٹی کمشنر بہاولنگر رانا محمد سیلم افضل سے مطالبہ کیا ہے کہ شہر اور گردنواح میں واٹر سپلائی کے کنکشن کی تحقیقات کروائیں تو معلوم ہوجائے گا کہ مذکورہ استاد شاگرد کی جوڑی نے کیسے قومی خزانے کو نقصان پہنچایا ہے۔ 

استاد‘ شاگرد

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...