بہاولنگر ‘ ڈسٹرکٹ ہسپتال لاوارث ‘ ڈاکٹرز غائب ‘ کرپشن کی نت نئی داستانیں

بہاولنگر ‘ ڈسٹرکٹ ہسپتال لاوارث ‘ ڈاکٹرز غائب ‘ کرپشن کی نت نئی داستانیں

  



بہاولنگر(نمائندہ خصوصی)ڈسٹرکٹ ہسپتال میں بدانتظامی،بے ضابطگیاں اور کرپشن عروج پر پہنچ گئی، لوکل پرچیزادویات،منٹینس،پی او ایل سمیت دیگرمدوں میںاپنے چہیتے ٹھیکیداروں کو نوازنے کا سلسلہ جاری،میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ڈی ایچ کیو ربٹر سٹمپ کا کردار ادا کرنے لگا،ایڈمن(بقیہ نمبر55صفحہ12پر )

 برانچ نے پرکشش سیٹوں پرمن پسند افراد کو نواز کیلئے ریٹ مقرر کرلیا،ہسپتال کو ایڈمن غنصفر،عمرفاروق،اسلم نواب اورریٹائرڈ ڈاکٹر چلنے لگے، میڈیکل سپرئنڈنٹ ڈاکٹر انعام الحق خلیجی شام ہوتے ہی ہسپتال سے غائب ، مختلف وارڈز میں تعینات جونیئر سٹاف نرسوںکے ساتھ بھی امتیازی سلوک کیاجانے لگا،متعدددرخواستیں کے باوجودضلعی انتظامیہ اور محکمہ صحت کے اعلی افسران کی جانب سے کاروائی عمل میں نہ لانا کئی طرح کے شکوک وشبہات جنم لے رہے ہیں۔ذرائع کے مطابق ڈسٹرکٹ ہسپتال بہاولنگر کی ایڈمن برانچ میں بھاری تنخواہوں پرتعینات افسران نے کروڑوں روپے کے بجٹ پرہاتھ صاف کرنے کیلئے اپنے من پسندافراد کو نوازا کا سلسلہ جاری ہے ،اکثر ایڈمنزنے محکمہ صحت کے ملازمین کے ساتھ ملکر اپنے پرائیویٹ افراد کو رکھا ہوا ہے جن کے ذریعے ہرماہ لاکھوں روپے کے بوگس بلوں کی ادائیگی کی جاتی ہیں،بااثرایڈمنزکے سامنے میڈیکل سپرئنڈنٹ بھی بے بس نظر آتے ہیں آئے روز اسپتال میںادویات کی کمی اورمریضوں کے ساتھ ناروسلوک کے واقعات رپورٹ ہونے کے باوجود ضلعی انتظامیہ اور محکمہ صحت کے اعلی افسران نے بھی چپ سادھ لی ہے ،عوامی حلقوں نے وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار اور وزیر صحت یاسمین راشد سے ڈی ایچ کیو ہسپتال میں بدانتظامی اور مبینہ کرپشن کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ 

نت نئی

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...